پاکستان

سرکاری زمین پرقبضہ،وزیراعظم نےسنسنی خیزدعویٰ کردیا

عمران خان کا کہنا تھاکہ سرکاری اراضی کےسروے کےنتائج سےاس مزاحمت کی وجوہات سامنےآگئیں

سرکاری زمین پرقبضہ،وزیراعظم نےسنسنی خیزدعویٰ کردیا، وزیراعظم عمران خان نےکہا ہےکہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم) پراحتجاج کی طرح ڈیجیٹل لینڈ ریکارڈزکی کیڈیسٹرل میپنگ پربھی شدید مزاحمت کا سامنا ہوا۔ اپنی ٹوئٹ میں وزیراعظم کا کہنا تھاکہ سرکاری اراضی کےسروے کےپہلےمرحلےکےنتائج سےاس مزاحمت کی وجوہات سامنےآگئیں۔ ان کا کہنا تھاکہ سیاسی اشرافیہ لینڈ مافیا کےساتھ مل کرجنگلات سمیت بڑے سرکاری رقبےپرقابض تھی۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ سروے میں مزید ہوشربا حقائق بھی ہمارے علم میں آئے ہیں، تین بڑے شہروں میں لینڈ مافیا کے زیرِقبضہ سرکاری زمین کی مالیت تقریباً 5595 ارب روپے ہے جبکہ جنگلات کے زیرِ قبضہ رقبے کی قیمت تقریباً 1869 ارب روپے ہے۔

ان کا کہنا تھاکہ جنگلات کی زمینوں پر قبضے سے جنگلات کے مناسب حجم سے متعلق موجودہ کمی میں شدت پیدا ہوئی، اس مصدقہ ڈیجیٹل ریکارڈ کی مدد سے لینڈ مافیاز اور ان کے سہولت کاروں کے خلاف کارروائی کریں گے۔

 

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.