پاکستان

قرآن پاک کی مبینہ بے حرمتی پر فسادات پھوٹ پڑے؛پولیس بے بس

خیبرپختونخوا کے ضلع چارسدہ کی تحصیل تنگی کی ایک مسجد میں مبینہ طور پر قرآن نذرِ آتش کرنے پر مظاہرین نے علاقے کے مرکزی پولیس اسٹیشن، 4 چوکیوں اور متعدد رہائشی کوارٹرز کو آگ لگادی۔

پولیس کی جانب سے پولیس اسٹیشن میں توڑ پھوڑ کرنے والے بے قابو ہجوم کو منتشر کرنے کے لیے کی گئی ہوائی فائرنگ اور آنسو گیس کے شیل فائر کیے گئے جس کے نتیجے میں ایک شخص زخمی ہوا۔عینی شاہدین کا کہنا تھا کہ مشتعل مظاہرین مندانی تھانے کے احاطے میں گھس گئے اور وہاں پارک کی گئی کم از کم 17 گاڑیوں اور موٹرسائیکلز کے علاوہ سرکاری ریکارڈ کو نذرِ آتش کردیا، پولیس اہلکار تھانے سے نکل کر بھاگ کھڑے ہوئے جس کے بعد بھڑکتے ہوئے شعلوں کو بجھانے کے لیے ریسکیو 1122کے اہلکاروں کو طلب کیا گیا۔

مظاہرین تھانے سے پولیس کا ضبط کیا گیا اسلحہ بھی ساتھ لے کر چلے گئے اور پولیس اسٹیشن کو آگ لگانے کے بعد بے قابو ہجوم نے ڈھکی میں ایک پولیس چوکی کو بھی نذرِ آتش کیاجس کے بعد وہ اومارزئی پولیس تھانے کی زیام چوکی پر پہنچے اور اسے بھی آگ لگادی۔پولیس تھانے اور 2 چوکیوں کو جلانے کے بعد ہجوم نے مندانی تھانے کی حدود میں ہی واقع جمال آباد چوکی اور شاہ کور چوکی کو بھی جلا ڈالا۔

مظاہرین رات گئے تک پولیس تھانے کے باہر ڈیرہ ڈالے بیٹھے رہے اور ملزم کو ان کے حوالے کرنے کا مطالبہ کیا، عینی شاہدین کا کہنا تھا کہ پولیس صورتحال کو قابو کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے۔

فسادات کو قابو کرنے کے لیے نوشہرہ اور مردان سے اضافی نفری کو طلب کرنا پڑا۔

 

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.