پاکستان

آرمی چیف اوراعلی عدلیہ کےخلاف ٹرینڈ چلانے والےگرفتار

ایف آئی اے نے سوشل میڈیا پر اینٹی اسٹیٹ سرگرمیوں میں ملوث عناصرکی گرفتاریوں کے لیے کریک ڈاون کیا

ایف آئی اے نے سوشل میڈیا پر اینٹی اسٹیٹ سرگرمیوں میں ملوث عناصرکی گرفتاریوں کے لیے کریک ڈاون کیا جس میں آرمی چیف کے خلاف ٹرینڈ چلانے والے سیاسی جماعت کے ایکٹوسٹ کوبھی گرفتارکرلیا گیا۔ ذرائع کے مطابق سوشل میڈیا پرآرمی چیف، چیف جسٹس سپریم کورٹ سمیت اعلی عدلیہ کوتنقید کا نشانہ بناتے ہوئے ٹرینڈ چلانے اوراینٹی سٹیٹ سرگرمیوں میں ملوث عناصرکی گرفتاریوں کے لیے ملک بھرمیں بڑے پیمانے پرکریک ڈاون شروع کردیا گیا ہے۔

ایف آئی اے سائبرکرائم کی ٹیموں نےدیگرونگزکےساتھ مل کراسلام آباد، لاہور،کراچی،ملتان اورراولپنڈی میں مختلف مقامات پرچھاپے مارے اورلاہورسےآرمی چیف کےخلاف ٹرینڈ چلانے والےسیاسی جماعت کےسوشل میڈیا ایکٹوسٹ مقصود عارف سمیت پانچ ملزمان کوگرفتار کرکے قانونی کاروائی کے لیے ایف آئی کےکاؤنٹرٹیررازم ونگ کے حوالے کردیا۔

سینئر آفیسر کا کہنا تھا کہ چونکہ سائبر کرائم ایکٹ سے سیکشن 20 غیر فعال ہوچکی ہے اس لیے سائبر کرائم ونگ براہ راست ایسے عناصر کے خلاف کارروائی عمل میں نہیں لاسکتا اس لیے سائبر کرائم ونگ دیگر یونٹس کی معاونت کرکے ملزمان کو کاونٹر ٹیررازم ونگ کے حوالے کررہا ہے اور ملزمان کی گرفتاریوں کے لیے چھاہے جاری ییں۔

دوسری جانب ایف آئی کاؤنٹر ٹیررازم ونگ کے آفیسر کا کہنا مختلف مقامات پر کارروائیاں جاری ہیں، ابھی مزید گرفتاریوں کا بھی امکان ہے، ڈی جی ایف آئی اے کو سائبر کرائم ونگ کے سینئر افسران نے بریفنگ بھی دی ہے جس میں سوشل میڈیا پر اینٹی اسٹیٹ سرگرمیوں میں ملوث ہزاروں پیجز کی نشاندہی کی گئی ہے۔ آفیسر نے بتایا کہ اسی طرح دو ہزار سے زائد اکاؤنٹس ایسے تھے جو پاک فوج اور ان کے سربراہ کے خلاف سوشل میڈیا پر مہم چلا رہے تھے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.