پاکستانفیچرڈ پوسٹ

کیا شہباز حکومت سرکاری سرپرستی میں چلنے والی پناہ گاہیں اور لنگر خانے بند کر دے گی؟ ایسی وضاحت سامنے آگئی کہ ملک بھر میں ایک نئی بحث کا آغاز ہوگیا

سوشل میڈیا پر دعوی کیا جارہا تھا کہ وزیراعظم کی تبدیلی کے بعد سرکاری پناہ گاہیں بند کردی گئی ہیں تاہم ان افواہوں کی اب حقیقت سامنے آگئی

کیا شہباز حکومت سرکاری سرپرستی میں چلنے والی پناہ گاہیں اور لنگر خانے بند کر دے گی؟ ایسی وضاحت سامنے آگئی کہ ملک بھر میں ایک نئی بحث کا آغاز ہوگیاہے۔

تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل سے وابستہ خاتون صحافی سیمل ہاشمی نے بتایا کہ”لاہور میں پنگاہ گاہیں مکمل طورپر فعال ہیں اور اس کی تصدیق محکمہ سوشل ویلفیئر پنجاب نے بھی کردی ہے”۔ ساتھ ہی انہوں نے لکھا کہ ” افواہیں پھیلانا بند کریں "۔ دوسری جانب پاکستان مسلم لیگ(ن)کی ترجمان مریم اورنگزیب نے احساس پروگرام اور پناہ گاہیں بند کرنے کی خبروں کو جھوٹ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ شہبازشریف نے وزیراعظم منتخب ہونے کے بعد قومی اسمبلی میں پہلے خطاب میں واضح کیا تھا کہ عوامی خدمت کے منصوبے جاری رہیں گے،بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام نہ صرف جاری رہے گا بلکہ اسے مزید توسیع دی جائے گی،وزیراعظم شہباز شریف نے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کو بچوں اور بچیوں کی تعلیم کا ذریعہ بنانے کا فیصلہ کیا ہے،کوئی پروگرام بند نہیں ہوا،عوام کی بھلائی کے ہر منصوبے کو مزید بہتر بنائیں گے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.