پاکستان

منی لانڈرنگ کیس، عدالت نے وزیراعظم شہباز شریف کو بڑی خوشخبری سنا دی

لاہور کی خصوصی عدالت نے شہباز شریف اور حمزہ شہباز کی عبوری ضمانتوں میں 14 مئی تک توسیع کردی

منی لانڈرنگ کیس میں عدالت نے وزیراعظم میاں شہباز شریف اور حمزہ شہباز کی ضمانت میں توسیع کرتے ہوئے ان کو حاضری سے معافی کی درخواست منظوری کرلی۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم شہباز شریف اور نو منتخب وزیر اعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز کیخلاف منی لانڈرنگ کیس کی تحقیقات کرنے والے وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے)کے تفتیشی افسر کا سندھ تبادلہ کردیا گیا جبکہ لاہور کی خصوصی عدالت نے شہباز شریف اور حمزہ شہباز کی عبوری ضمانتوں میں 14 مئی تک توسیع کردی۔ اسپشل سینٹرل کورٹ کے جج نے ریمارکس دیے کہ حاضری معافی کی درخواست ایسے کب تک چلے گی؟ آئندہ سماعت پر دلائل دیں یا فرد جرم عائد ہوگی۔ اسپشل سینٹرل کورٹ کے جج اعجاز اعوان نے وزیراعظم اور ان کے صاحبزادے حمزہ شہباز کی عبوری ضمانتوں پر سماعت کی۔ وکلا نے شہبازشریف کی حاضری معافی کی درخواست دائر کی جس میں مقف اختیار کیا گیا کہ کابینہ اجلاس میں مصروفیت کے باعث وہ عدالت میں پیش نہیں ہوسکتے، عدالت نے شہباز شریف کی حاضری سے معافی کی درخواست منظور کرلی۔ دوران سماعت وکیل امجد پرویز نے بیان دیا کہ عدالت لمبی تاریخ دے، یقین دلاتے ہیں وزیراعظم خود عدالت میں پیش ہوں گے۔ امجد پرویز نے کہا کہ اس کیس میں فرد جرم عائد نہیں ہوسکتی جس پر عدالت نے ریمارکس دیے کہ آپ آئندہ سماعت پر دلائل دیں یا ہم فرد جرم عائد کریں گے۔ دوران سماعت ایف آئی نے بتایا کہ کیس کی تحقیقات کرنے والے تفتیشی افسر کا سندھ تبادلہ کردیا گیا ہے۔ اسسٹنٹ ڈائریکٹر ندیم اختر کو نیا تفتیشی افسر تعینات کیا گیا ہے۔ نئے تفتیشی افسر نے عدالت میں بیان دیا کہ ابھی کیس کا جائزہ لینا ہے لہذا عدالت مہلت دے۔ سپیشل سنٹرل کورٹ نے شہباز شریف اور حمزہ شہباز کی عبوری ضمانتوں میں 14مئی تک توسیع کردی۔ بعد ازاں حمزہ شہباز نے عدالت سے باہر میڈیا سے گفتگو میں دعوی کیا کہ عمران خان ان کی حلف برداری میں رکاوٹ ڈال رہے ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.