پاکستان

پیپلزپارٹی نے پنجاب میں 3 وزارتیں مانگ لیں

ملاقات کے دوران دونوں پارٹیز ن لیگ اور پیپلزپارٹی کے قائدین میں مل کر چلنے پر اتفاق کیا گیا

پیپلزپارٹی نے گورنر پنجاب کا عہدہ نہ لینے کا فیصلہ کرتے ہوئے پنجاب میں 3 وزارتیں، 2 معاون خصوصی اور چیئرمین شپ مانگ لی۔ وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز سے پیپلزپارٹی کے وفد کی ملاقات ہوئی۔ پیپلز پارٹی کے وفد میں اسپیکر قومی اسمبلی، راجہ پرویز اشرف، یوسف رضاگیلانی، قمرزمان کائرہ، علی حیدر گیلانی اور حسن مرتضیٰ شامل تھے۔ پیپلزپارٹی کے وفد کی جانب سے ملاقات کے دوران وزیراعلیٰ کا منصب سنبھالنے پر حمزہ شہباز کو مبارکباد اور گلدستہ پیش کیا گیا۔

ذرائع پیپلز پارٹی کے مطابق ملاقات کے دوران دونوں پارٹیز ن لیگ اور پیپلزپارٹی کے قائدین میں مل کر چلنے پر اتفاق کیا گیا ہے۔ ملاقات میں پیپلز پارٹی اور ن لیگ کے درمیان پاور شیئرنگ کے حوالے سے اہم پیشرفت سامنے آئی ہیں، ذرائع پیپلزپارٹی کے مطابق پیپلزپارٹی پنجاب کےآئینی عہدوں سے دستبردار ہو گئی ہے۔ ذرائع پیپلزپارٹی کے مطابق پیپلزپارٹی نے پنجاب میں 2 سے زائد معاون خصوصی، قائمہ کمیٹی کی چیئرمین شپ سمیت 2 پارلیمانی سیکریٹریز کے عہدے بھی مانگ لیے ہیں۔

ذرائع کے مطابق وزیراعلی پنجاب حمزہ شہبازکی جانب سے پیپلزپارٹی کومکمل تعاون کی یقین دہانی کرائی گئی ہے۔ پیپلزپارٹی کے ذرائع کا کہنا ہے کہ پیپلزپارٹی پنجاب کےرہ نما حسن مرتضی کو سینئر وزیر بنائےجانےکا امکان ہے۔ پیپلزپارٹی کے ممکنہ وزراءمیں علی حیدر گیلانی، مخدوم عثمان محمود،ممتازعلی چانگ شامل ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ شازیہ عابد، غضنفر عباس لنگا،رئیس نبیل کو پارلیمانی سیکریٹری اورچیئرمین پارلیمانی پارٹی بنائےجانےکاامکان ہے۔

ذارئع پیپلز پارٹی کے مطابق پیپلزپارٹی پنجاب کے شہزاد سعید چیمہ کو معاون خصوصی بنائے جانے کاامکان ہے جبکہ پیپلزپارٹی کے پاور شیئرنگ فارمولے پر ن لیگ کی اعلی قیادت سے مشاورت کی جائے گی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ حتمی مشاورت کے بعد پیپلزپارٹی کو پاور شئیرنگ فارمولے کے تحت عہدے دیئے جائیں گے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.