پاکستانفیچرڈ پوسٹ

عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد پر سابق ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی قاسم سوری کے خلاف ایکشن کیوں لیا گیا؟ سنسنی خیز حقیقت نے سب کچھ واضح کر دیا

سابق ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی کی 3اپریل کو دی گئی رولنگ پر ازخود نوٹس سپریم کورٹ کے 12ججز کی مشاورت کے بعد لیا گیا تھا

عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد پر سابق ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی قاسم سوری کے خلاف ایکشن کیوں لیا گیا؟ سنسنی خیز حقیقت نے سب کچھ واضح کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں گزشتہ روز آرٹیکل 63اے کی تشریح سے متعلق صدارتی ریفرنس کی سماعت ہوئی۔ اس دوران ریمارکس دیتے ہوئے چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس عمر عطابندیال نے سابق ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی قاسم سوری کی رولنگ پر لیے گئے ازخود نوٹس کی بھی وضاحت کر دی۔ بتایا گیا ہے کہ چیف جسٹس نے کہا کہ سپریم کورٹ کی از خود نوٹس کی طاقت کا استعمال محدود کیا جا چکا ہے۔ سابق ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی کی 3اپریل کو دی گئی رولنگ پر ازخود نوٹس سپریم کورٹ کے 12ججز کی مشاورت کے بعد لیا گیا تھا۔

چیف جسٹس نے کہا کہ تمام ججز اس بات پر متفق تھے کہ یہ ایک آئینی معاملہ ہے اور اسے عدالت میں اٹھانے کی ضرورت ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ عدالت محض خواہشات کی تکمیل کے لیے ازخود نوٹس نہیں لیتی۔ وہ ایک آئینی معاملہ تھا اور آئین کا تحفظ ہمارا فرض ہے۔ ازخود نوٹس کسی کے کہنے پر نہیں بلکہ بنچ کی مرضی سے لیا جاتا ہے۔زیرسماعت صدارتی ریفرنس کے حوالے سے چیف جسٹس نے کہا کہ یقین ہے کہ وفاقی حکومت اس ریفرنس کی اہمیت سے واقف ہو گی اور اس کی تشریح کے راستے میں نہیں آئے گی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.