پاکستان

بلوچستان میں خواتین خودکش حملہ آوروں کو تیارکرنے کا انکشاف

سی ٹی ڈی نے تربت میں کارروائی کے دوران ایک مکان سے خاتون کو ساتھی سمیت گرفتار کیا، خاتون نور جہاں کا کالعدم تنظیم سے تھا

ترجمان بلوچستان حکومت فرح عظیم شاہ نے کہا ہے کہ بیرونی ہاتھ ہماری بلوچ خواتین کو استعمال کر رہے ہیں، بلوچستان میں خواتین خودکش حملہ آوروں کو تیار کیا جا رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان بلوچستان حکومت فرح عظیم شاہ نے کہا کہ سی ٹی ڈی نے تربت میں کارروائی کے دوران ایک مکان سے خاتون کو ساتھی سمیت گرفتار کیا، خاتون نور جہاں اور اس کے ساتھی کا تعلق کالعدم بی ایل اے کی ذیلی تنظیم مجید بریگیڈ سے ہے۔ ترجمان بلوچستان حکومت کے مطابق آپریشن کے دوران خاتون اہل کار بھی شامل تھیں، مکان سے خودکش جیکٹ،کلاشنکوف، 9 کلو باروی مواد اور 6 ہینڈگرنیڈ ملے، مقدمہ درج کرکے خاتون سے تفتیش کی جارہی ہے، عدالت نے خاتون اور اس کے ساتھی کا 7 روزہ ریمانڈ دیا ہے۔ فرح عظیم شاہ نے کہا کہ نورجہاں نے تفتیش میں انکشاف کیا کہ بلوچستان میں خواتین خودکش حملہ آوروں کو تیار کیا جا رہا ہے، مجید بریگیڈ خواتین کو خودکش حملے کے لیے تیار کر رہی ہے، مارے گئے دہشت گرد اسلم عرف اچھو کی بیوی یاسمین ان کی سربراہی کر رہی ہے۔ ترجمان نے بتایا کہ نورجہاں نے اعتراف کیا ہے کہ اسے دبئی سے ایک شخص ندیم کے ذریعے مالی معاونت حاصل تھی، دبئی سے پیسے دہشت گردوں کو ٹرانسفر ہونے کے معاملے پر دبئی کی حکومت سے سرکاری رابطے کیے جارہے ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.