پاکستانفیچرڈ پوسٹ

پاکستان کی معاشی ترقی کی رفتار اگلے مالی سال میں کیسی ہوگی؟ غربت اور مہنگائی میں کمی آئے گی یا اضافہ ہوگا؟ ملک کی عوام کے ہوش اڑا دینے والی خبر سامنے آگئی

پاکستان میں وفاقی حکومت کی سالانہ پلان کوآرڈینیشن کمیٹی کی جانب سے آئندہ مالی سال کیلئے ملکی معاشی شرح نمو کا ہدف پانچ فیصد رکھا گیا ہے

پاکستان کی معاشی ترقی کی رفتار اگلے مالی سال میں کیسی ہوگی؟ غربت اور مہنگائی میں کمی آئے گی یا اضافہ ہوگا؟ ملک کی عوام کے ہوش اڑا دینے والی خبر سامنے آگئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان میں وفاقی حکومت کی سالانہ پلان کوآرڈینیشن کمیٹی کی جانب سے آئندہ مالی سال کے لیے ملکی معاشی شرح نمو کا ہدف پانچ فیصد رکھا گیا ہے۔ موجودہ مالی سال میں معاشی شرح نمو چھ فیصد تک رہنے کا امکان ہے۔ اس سے پہلے پاکستان کی وفاقی وزارت خزانہ کی جانب سے آئندہ مالی سال میں ملک کی مجموعی معاشی ترقی چھ فیصد کی رفتار سے نہ بڑھنے کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے۔ پاکستان کی وزارت خزانہ کی جانب سے اگلے مالی سال میں ملکی معاشی ترقی چھ فیصد کی رفتار سے نہ بڑھنے کی پیش گوئی اور سالانہ پلان کوآرڈینیشن کمیٹی کی جانب سے پانچ فیصد کا ہدف اس وقت سامنے آیا جب ملک میں تقریبا دو ماہ پہلے قائم ہونے والی حکومت اپنا پہلا بجٹ پیش کرنے جا رہی ہے۔ پلان کوآرڈینیشن کمیٹی کی جانب سے پانچ فیصد کا ہدف اور وزارت خزانہ کی جانب سے اگلے مالی سال میں مجموعی معاشی شرح نمو کے چھ فیصد کی رفتار سے نہ بڑھنے کی پیش گوئی حکومت کی نیشنل اکاونٹس کمیٹی کے جاری کردہ اعداد و شمار کے بعد کی گئی ہے جس میں کہا گیا کہ موجودہ مالی سال میں معاشی شرح نمو یا جی ڈی پی کی ترقی کی رفتار چھ فیصد تک رہے گی۔

وزارت خزانہ کی جانب سے اگلے مالی سال میں جی ڈی پی کی ترقی کی رفتار چھ فیصد نہ ہونے کی وجہ مہنگائی اور ڈالر کے مقابلے میں پاکستانی روپے کی قدر میں ہونے والی کمی کو قرار دیا گیا ہے۔ وزارت کی جانب سے کہا گیا ہے کہ اگرچہ موجودہ مالی سال میں ملکی معیشت کی رفتار چھ فیصد تک رہنے کی توقع ہے تاہم مالیاتی دبا اور بیرونی شعبے کی کارکردگی کی وجہ سے اگلے سال میں یہ گروتھ برقرار نہیں رہ سکتی۔ پاکستان میں ماہرین معیشت کا اس پیش گوئی پر یہ کہنا ہے کہ وزارت خزانہ کی جانب سے جو بات کی گئی ہے اس سے مراد یہ ہے کہ پاکستان اکانومی اوور ہیٹڈ ہے یعنی یہ اپنی استعداد اور گنجائش سے زیادہ ترقی دکھا رہی ہے جو کہ پائیدار نہیں ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.