پاکستانفیچرڈ پوسٹ

مخلوط حکومت نے آئی ایم ایف کے آگے گھٹنے ٹیک دیئے، پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ہوشرباء اضافہ کے بعد عوام پر ایک بار پھر بجلی بم گرانے کی تیاریاں مکمل

بجلی صارفین کیلئے 10 سلیب متعارف ہر سلیب کے مختلف نرخ مقرر کردیے ، فی یونٹ بجلی کی قیمت کم سے کم 24 اور زیادہ سے زیادہ 37 روپے تک ہوگئی

مخلوط حکومت نے آئی ایم ایف کے آگے گھٹنے ٹیک دیئے، پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ہوشرباء اضافہ کے بعد عوام پر ایک بار پھر بجلی بم گرانے کی تیاریاں مکمل کرلی گئیں۔

تفصیلات کے مطابق بجلی صارفین کیلئے 10 سلیب متعارف ہر سلیب کے مختلف نرخ مقرر کردیے گئے ، فی یونٹ بجلی کی قیمت کم سے کم 24 اور زیادہ سے زیادہ 37 روپے تک ہوگئی ، ماہانہ فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ الگ سے بجلی کے بلوں میں شامل ہو گی ۔ ذرائع کے مطابق 300 یونٹ استعمال کرنے والے صارف کا بل 12 ہزار 359 روپے تک ہو گا ، 400 یونٹ استعمال کرنے والے صارف کو 17 ہزار 400 روپے تک بل آنے کا امکان ہے ، 500 یونٹ استعمال کرنے والے صارفین سے 21 ہزار 745 روپے بل لیا جائے گا ، اسی طرح 600 یونٹ بجلی استعمال کرنے والے والے صارف کا بل 26 ہزار 779 روپے تک آنے کا امکان ہے تو 700یونٹ استعمال کرنے پر بجلی کا بل 32 ہزار 886 روپے ہوگا ۔

خیال رہے کہ بجلی کے بنیادی ٹیرف میں 7 روپے 91 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دے دی گئی ہے ، بجلی کا بنیادی ٹیرف اس وقت 16روپے 91 پیسے فی یونٹ چارج کیا جارہا ہے جب کہ اس ٹیرف میں مزید اضافے کی منظوری دی گئی ہے ، بجلی کی قیمت میں اس اضافے کے بعد فی یونٹ 24 روپے 82 پیسے کا ہوجائے گا ، نئی قیمتوں کا اطلاق یکم جولائی سے ہوگا ، نیپرا نے اپنا یہ فیصلہ وزارت توانائی کو بھجوا دیا ہے ، وزرات توانائی پر لازم ہوگا کہ نئی قیمتوں پر صارفین کو سبسڈی دینے سے متعلق ایک مہینے میں فیصلہ کرے ، اگر وہ فیصلہ نہیں کرتی تو نیا بنیادی ٹیرف تمام صارفین پر لاگو ہوجائے گا ۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.