پاکستان

بیرونی سازش کا کوئی ثبوت موجود نہیں؛میجر جنرل بابر افتخار

پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل بابر افتخار نے ایک بار پھر کہا ہے کہ قومی سلامتی کمیٹی میں شرکاء کو مفصل انداز میں بتایا گیا کہ بیرونی سازش کا کوئی ثبوت موجود نہیں۔

ٹی وی چینل سے گفتگو میں ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں عسکری قیادت موجود تھی، واضح طور پر شرکاء کو بریف کیا گیا کہ کسی قسم کی سازش کے شواہد نہیں، ایسا کچھ نہیں ہوا، شرکاء کومفصل انداز میں بتایا گیا کہ کسی سازش کا کوئی ثبوت نہیں ہے۔ڈی جی آئی ایس پی آر نے بتایا کہ اس میٹنگ میں چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی، تینوں مسلح افواج کے سربراہان، اور ڈی جی آئی ایس آئی موجود تھے، قومی سلامتی کمیٹی کی میٹنگ میں بہت واضح اور مفصل انداز میں شرکاء کو یہ ایجنسی کی طرف سے بریف کیا گیا کہ کسی قسم کی کوئی سازش یا اس چیز کےکوئی شواہد نہیں ہیں، ایسا کچھ نہیں ہوا، ہماری ایجنسیز  دن رات یہی کام کرتی ہیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ 24 گھنٹے پاکستان کے دشمن کے عزائم کو خاک میں ملانا ہی ہماری ایجنسی کا کام ہے، 24گھنٹےپاکستان کیخلاف ہونے والی سازشوں اور ان چیز کا ادراک رکھنا اور ان کو کاؤنٹر کرناہی ایجنسیز کا کام ہے ۔

ترجمان پاک فوج کے مطابق اس میٹنگ میں تمام شرکاء کو واضح طور پر مفصل انداز میں بتادیاگیا تھا کہ ہم نےاس ساری چیز کو بڑے بہتر طریقے سے دیکھا ہے اور بہت پروفیشنلی شرکاء کو بریف کیاگیا کہ  ایسا کچھ نہیں ہے، اس پورے معاملے میں کسی قسم کی سازش کے کوئی شواہد موجود نہیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ 2019 میں حکومت کی درخواست پر ایک اسپیشل سیل قائم کیاگیا ، اس سیل نے 30 سے زائد مختلف محکموں، وزارتوں اور ایجنسی کے درمیان کوآرڈی نیشن مکینزم بنایا ، اس سیل نےہرپوائنٹ پر ایک مکمل ایکشن پلان بنایا اور تمام محکموں، وزارتوں اور ایجنسی سے عمل درآمد بھی کرایا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.