پاکستانفیچرڈ پوسٹ

بحریہ ٹائون کے ملک ریاض اور عمران خان کے درمیان ہونے والا خفیہ معاہدہ ، رئیل اسٹیٹ کے ٹائیکون کے اہل خاندان بھی کھل کر میدان میں آگئے

ملک ریاض کے خاندان کا نیشنل کرائم ایجنسی اور عمران خان حکومت کے درمیان ہونیوالے خفیہ معاہدے کے نکات کو منظر عام پرلانے پر تشویش کا اظہار

بحریہ ٹائون کے ملک ریاض اور عمران خان کے درمیان ہونے والا خفیہ معاہدہ ، رئیل اسٹیٹ کے ٹائیکون کے اہل خاندان بھی کھل کر میدان میں آگئے ۔

تفصیلات کے مطابق بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ موقف حکومت پاکستان کے گزشتہ روز کیئے گئے اعلان سے متعلق ہے جس میں برطانیہ کی نیشنل کرائم ایجنسی اور ملک ریاض کے خاندان کے افراد کے درمیان طے پانے والے ایک خفیہ معاہدے کی تفصیلات جاری کی گئی تھیں ،بیان میں کہا گیا مورخہ 6 نومبر 2019 کو طے پانے والے خفیہ معاہدے میں دو اہم نکات کا ذکر کیا گیا تھا۔

پہلے نکتے میں نیشنل کرائم ایجنسی کے لیے غیر مشروط طور پر کچھ اثاثے منجمد کرنے کے احکامات کو واپس لینا تھا جو نیشنل کرائم ایجنسی نے برطانیہ کے متعدد بینک اکاؤنٹس پر حاصل کیے تھے کیونکہ حکومت پاکستان کی جانب سے نیشنل کرائم ایجنسی کو خط لکھا گیا تھا جس میں پاکستان کے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے بیٹے حسن نواز کی جانب سے 2007 میں جائیداد کے حصول اور اس کے بعد ملک ریاض کے بیٹے کو 2016 میں فروخت کرنے کا حوالہ دیا گیا تھا۔ دوسرا نکتہ یہ تھا کہ اکاونٹ ہولڈرز کی ہدایت پر ملک ریاض کے کاروبار، بحریہ ٹاون (پرائیویٹ)لمیٹڈ پر واجب الادا قرض کے بدلے ان بینک اکاؤنٹس کے مواد کی ادائیگی کی جائے۔خفیہ معاہدے میں ایک ہائیڈ پارک پلیس کی فروخت اور اس سے حاصل ہونے والی رقم کو اسی قرض کی مد میں ادا کی جانے والی رقم کا بھی ذکر کیا گیا تھا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.