پاکستانفیچرڈ پوسٹ

بڑھتی ہوئی مہنگائی سے پریشان تنخواہ دار طبقے کے لئے ایک اور مشکل‘ حکومت نے تنخواہ دار طبقے کو دیا گیا انکم ٹیکس ریلیف کم کرنے پر غور شروع کر دیا

حکومت نے آئی ایم ایف کے مطالبے پر عمل کرتے ہوئے تنخواہ دار طبقے کو حالیہ بجٹ میں دیا گیا انکم ٹیکس ریلیف کم کرنے پر غور شروع کردیا

بڑھتی ہوئی مہنگائی سے پریشان تنخواہ دار طبقے کے لئے ایک اور مشکل‘ حکومت نے تنخواہ دار طبقے کو دیا گیا انکم ٹیکس ریلیف کم کرنے پر غور شروع کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق حالیہ بجٹ میں حکومت نے تنخواہ دار طبقے کے لیے ماہانہ آمدن پر عائد ٹیکس کم کرنے کی تجویز دی تھی لیکن حکومت کو اپنی اس تجویز پر آئی ایم ایف کی جانب سے گرین سگنل نہ ملنے کی وجہ سے قرض کی قسط کی راہ ہمورا کرنے کے لیے حکومت تنخواہ دار طبقے کو دیا گیا ریلیف کم کرنے پر غور کرنے لگی ہے۔ اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت ماہانہ 1 لاکھ تک تنخواہ والوں کو تو ریلیف برقرار رکھ سکتی ہے تاہم 1 لاکھ 25 ہزار ماہانہ کمانے والے پر بجٹ میں تجویز کردہ ٹیکس 1250 روپے سے بڑھا کر 2500 روپے ماہانہ ہونے کا امکان ہے، اسی طرح 2 لاکھ ماہانہ تنخواہ والوں کے لیے بجٹ میں تجویز کردہ ٹیکس 7 ہزار سے بڑھ کر10 ہزار ماہانہ ہوجائے جب کہ 3 لاکھ ماہانہ تنخواہ والے افراد پر حالیہ بجٹ میں 19 ہزار 500 روپے ٹیکس لگنا تھا جو آئی ایم ایف کے مطالبے کے بعد 24 ہزار 500 روپے ہوسکتا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.