پاکستان

عمران خان کی حمایت ;دو پراسیکیوٹرز برطرف

وزارت داخلہ نےدونوں اسپیشل پبلک پراسیکیوٹرزکوعہدے سےہٹانےکا نوٹیفکیشن جاری کردیا

پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کی دہشت گردی کے مقدمےمیں بریت کی حمایت کرنےوالےدوپراسیکیوٹرزکوعہدے سے برطرف کردیا گیا۔ وزارت داخلہ نےدونوں اسپیشل پبلک پراسیکیوٹرزکوعہدے سےہٹانےکا نوٹیفکیشن جاری کردیا۔ عامرسلطان گورایا اور فاخرہ عامرسلطان انسداد دہشت گردی عدالت کےاسپیشل پبلک پراسیکیوٹرزتھے۔ دونوں پبلک پراسیکیوٹرزنےعمران خان اورپی ٹی آئی قیادت کی پارلیمنٹ پرحملےکےمقدمےمیں بریت کی حمایت کی تھی۔ ایڈووکیٹ جنرل اسلام آباد نےعمران خان کی بریت کی حمایت کرنےپردونوں پراسیکیوٹرزکوعہدے سےہٹانےکیلئےخط لکھا تھا۔

2020 میں اسلام آباد کی انسداد دہشت گردی عدالت نےپارلیمنٹ حملہ کیس میں وزیراعظم عمران خان کوبری کردیا تھا۔ 2014 میں پاکستان تحریک انصاف  اورپاکستان عوامی تحریک کےدھرنےکےدوران مشتعل افراد نےپی ٹی وی کےہیڈ کوارٹرپردھاوا بولا تھا۔ ن لیگ کی حکومت نےعمران خان اورڈاکٹرطاہرالقادری سمیت کم وبیش 70 افراد کےخلاف تھانہ سیکریٹریٹ میں پارلیمنٹ ہاؤس،پی ٹی وی اورسرکاری املاک پر حملوں کےالزام میں دہشت گرد کا مقدمہ درج کیا تھا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.