پاکستان

کون کتنا ٹیکس دے گا؟مفتاح اسماعیل نے سب بتا دیا

عوام سے اب 7004 ارب روپے کے بجائے 7470 ارب روپے  ٹیکس لیا جائے گا، حکومت نے ٹیکس وصولی کا ہدف تقریباً 396 ارب روپے بڑھا دیا۔

وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل نے قومی اسمبلی میں بجٹ پر بحث سمیٹتے ہوئے مختلف ٹیکسز کا بھی اعلان کردیا۔مفتاح اسماعیل کا کہنا ہے کہ ایک دفعہ کیلئے 10 فیصد سپر ٹیکس 13 سیکٹرز پر لگے گا  جب کہ 4 فیصد ٹیکس دیگر تمام سیکٹرز  پر لگے گا۔

قومی اسمبلی سے خطاب میں مفتاح نے کہا کہ ملک کو ڈیفالٹ سے بچانے کی قیمت ادا کرنی پڑے گی، جیولرز کو ٹیکس نیٹ میں لا رہے ہیں، آئی ٹی کو رعایتیں دے رہے ہیں۔وزیر خزانہ نے بتایا کہ اس سال وہ خود 20 کروڑ روپے سے زیادہ ٹیکس دیں گے، عمران خان ہر سال ایک سے ڈیڑھ لاکھ روپے ٹیکس دیتے تھے، توشہ خانہ کی وجہ سے پچھلے سال عمران خان نے 98 لاکھ روپے ٹیکس دیا۔

مفتاح اسماعیل نے بتایا کہ ٹیکس اہداف میں اضافہ کردیا گیا ہے، اب 7004 کی بجائے ٹیکسوں کا ہدف 7470 روپے ہوگا، نان ٹیکس ریونیو کو 2 ہزار ارب روپے سے کم کرکے 1935 ارب کردیا گیا ہے، صوبوں کو اب 4373 ارب روپے دیں گے، ان تمام اخراجات کے بعد 4547 ارب روپے کا خسارہ ہوگا۔

وزیر خزانہ نے بتایا کہ 300 مربع فٹ جیولرز کی دکان پر 40 ہزار روپے کا فکس ٹیکس لگایا گیا ہے جبکہ بڑی دکانوں پر 17 فیصد کی بجائے 3 فیصد جنرل سیلز ٹیکس عائد ہوگا، عام شہری سونا بیچنے پر جو 4 فیصد ود ہولڈنگ ٹیکس دیتے تھے اسے کم کرکے ایک فیصد کردیا گیا ہے۔

مفتاح اسماعیل نے کہا کہ ریٹیل میں 90 لاکھ سے زیادہ دکانیں ہیں، ان میں 25 سے لے کر 35 لاکھ کو ٹیکس نیٹ میں لائیں گے اور ان سے 3 ہزار سے 10 ہزار روپے تک فکس ٹیکس وصول ہوگا۔ اس سے ان دکانداروں کو بھی آسانی ہوگی۔ ملک میں جیولرز کی 30 ہزار سے زائد دکانیں ہیں جن میں سے صرف 28 رجسٹرڈ ہیں۔ 300 مربع فٹ جیولرز کی دکان پر 40 ہزار روپے کا فکس ٹیکس لگایا گیا ہے جبکہ بڑی دکانوں سے 17 فیصد جی ایس ٹی کی بجائے 3 فیصد جنرل سیلز ٹیکس وصول ہوگا، اسی طرح عام شہری سونا بیچنے پر جو 4 فیصد ودہولڈنگ ٹیکس دیتے تھے، اسے کم کرکے ایک فیصد کردیا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.