پاکستان

وزیراعلیٰ پنجاب کا انتخاب؛سپریم کورٹ کا تین رکنی بینچ تشکیل

چیف جسٹس عمر عطا بندیال، جسٹس اعجاز الاحسن، جسٹس جمال خان مندوخیل شامل ہیں

سپریم کورٹ نے تحریک انصاف کی جانب سے وزیر اعلیٰ پنجاب کے انتخاب کے معاملے پر تین رکنی بینچ تشکیل دے دیا، جس میں چیف جسٹس عمر عطا بندیال، جسٹس اعجاز الاحسن، جسٹس جمال خان مندوخیل شامل ہیں۔ پنجاب کی وزارت اعلیٰ کے انتخاب کے معاملے پر اپیل کی سماعت کے لیے تشکیل دیا گیا تین رکنی بینچ دوپہر ڈیڑھ بجے اپیل کی سماعت کرے گا۔

قبل ازیں چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس عمر عطا بندیال، جسٹس اعجاز الاحسن، جسٹس منصور علی شاہ اور جسٹس جمال خان مندخیل عدالت عظمیٰ پہنچے۔ رجسٹرار آفس نے اپیل کی 5 پیپرز بک طلب کیں، جس پر پی ٹی آئی نے 5 کاپیاں جمع کرا دیں۔  رجسٹرار آفس ذرائع کے مطابق قانونی ضابطہ کے تحت مزید پیپر بکس منگوائی گئی ہیں تاکہ  اگر لارجر بینچ بنتا ہے تو اپیلوں کی کاپیاں مکمل ہونی چاہییں۔ واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف نے وزیر اعلیٰ پنجاب کے انتخاب ٰ سے متعلق لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے کو آج صبح سپریم کورٹ میں درخواست کے ذریعے چیلنج کیا تھا۔

تحریک انصاف کی درخواست میں ڈپٹی اسپیکرپنجاب اسمبلی، حمزہ شہبازاوردیگر کو فریق بنایا گیا، اپیل میں کہا گیا کہ لاہورہائی کورٹ نے ہمارا مؤقف تسلیم کیا ہے،عدالت نے مختصرنوٹس پرپنجاب اسمبلی کا اجلاس بلانے کا حکم دیا،تاہم شارٹ نوٹس پراجلاس بلانے سے ریلیف کے بجائے ہمارا نقصان ہوگا۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ لاہورہائی کورٹ کا فیصلہ غیرقانونی ہے، فیصلےکےخلاف اپیل منظورکی جائے اور تبدیل کرکےاجلاس بلانےکا مناسب وقت دیا جائے۔ ہمارے ارکان اجلاس میں شریک ہوسکیں۔

پی ٹی آئی نے درخواست میں اپیل کی ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز کی کامیابی کا نوٹی فکیشن معطل  کرکے انہیں عہدے سے ہٹایا جائے تاکہ صاف شفاف الیکشن ہو سکیں۔ لہٰذا پنجاب اسمبلی میں وزارت اعلیٰ کا الیکشن فوری معطل کیا جائے۔ تحریک انصاف کی جانب سے سپریم کورٹ میں اپیل کے ساتھ فوری سماعت کی درخواست بھی دائر کی گئی ہے۔

 

 

 

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.