پاکستان

شازیہ مری وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل کی حمایت میں بول پڑیں

وفاقی وزیرِ نےکہا ہےکہ وفاقی وزیرِخزانہ نےوہ کام کیےجن سےمعیشت ٹریک پرآسکے

وفاقی وزیرِتخفیف غربت شازیہ مری نےکہا ہےکہ وفاقی وزیرِخزانہ مفتاح اسماعیل نےوہ کام کیےجن سےمعیشت ٹریک پرآسکے،مفتاح اسماعیل ملک کی بہتری کےلیےتنقید برداشت کررہےہیں۔ اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتےہوئےشازیہ مری نےکہا کہ حکومت کی ذمے داری ہوتی ہےکہ لوگوں کوپریشانیوں سےنکالا جائے،لوگوں کوسمجھایا جائےکہ مشکل فیصلہ کیوں لیا جا رہا ہے،ہمیں جوملبہ ملا ہےاُسے جھیلنا پڑے گا۔

شازیہ مری نےکہا کہ جس حالت میں عمران خان نےملک کوپہنچایا ایسا تاریخ میں کبھی نہیں ہوا،عمران خان نےڈالر 189 پرچھوڑا تھا، حکومت کوبےشمارمسائل ورثےمیں ملے۔ اُنہوں نےکہا کہ عمران خان نےآئی ایم ایف سےمعاہدے پرعمل نہیں کیا، لفاظی بہت کی گئی ہے، وہ اب بھی جاری ہے،جب عمران خان اقتدارمیں تھےتوکہتےتھےکہ پچھلی حکومتیں چورتھیں،اب عمران خان اقتدارسےباہرہیں توکہتےہیں کہ موجودہ حکومت چورہے۔

وفاقی وزیرنےکہا کہ عمران خان! آپ اپنے 4 سال کا حساب دو،خان صاحب کوغم صرف کرسی جانےکا ہے، پی ٹی آئی حکومت کوعوام سے غرض نہیں تھی،انہوں نےآئی ایم ایف سےمعاہدے کےخدوخال کبھی نہیں بتائے۔ اُن کا کہنا تھا کہ عمران خان نےڈالرکی قیمت بڑھا کر مہنگائی کا عذاب مسلط کیا،کسی کوغدارقراردینا ہمارا طریقہ نہیں،عمران خان جوکررہےہیں وہ حب الوطنی نہیں ہے،عمران خان یہ بتائیں کہ ملکی تشخص کےلیےانہوں نےکیا کیا؟

شازیہ مری نےکہا کہ عمران خان اپنی 4 سالہ حکومت کا حساب دینےکوتیارنہیں، وہ اداروں سے کہہ رہا ہے کہ مجھے اقتدار میں لاؤ ورنہ تم برے ہو، وہ اداروں کو تنازعات میں گھسیٹنا چاہتا ہے۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ جب عمران خان اقتدار میں نہیں تھے تب بھی امپائر کی انگلی کی بات کرتے تھے، پہلے کہتے تھے کہ نیوٹرل اچھا ہوتا ہے، اب ادارے بھی نیوٹرل ہو کر برے ہو گئے، آئین کے مطابق ادارے کو جو کام نہیں کرنا وہ کرنے کا کہہ رہے ہیں۔

وفاقی وزیر نے یہ بھی کہا کہ وزیرِ اعظم شہباز شریف کوشش کر رہے ہیں کہ پچھلا گند سمیٹیں اور ملک کو مثبت سمت میں آگے لے جائیں، ملک کی جو سمت تھی وہ پچھلے 4 برسوں میں ختم ہو گئی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.