پاکستانفیچرڈ پوسٹ

ملک بھر میں ٹیلی کام اور انٹرنیٹ سروس فراہم کرنے والی کمپنیوں نے مسلم لیگ ن کی موجودہ حکومت کو دھمکی دے دی، صارفین بھی سراپا احتجاج کیوں ہوئے؟

طویل لوڈشیڈنگ اور بیک اپ آلات کی درآمد میں رکاوٹ کی وجہ سے ٹاور اور تنصیبات کے لیے بیک اپ بجلی کی مسلسل فراہمی ممکن نہیں رہی

ملک بھر میں ٹیلی کام اور انٹرنیٹ سروس فراہم کرنے والی کمپنیوں نے مسلم لیگ ن کی موجودہ حکومت کو دھمکی دے دی، صارفین بھی سراپا احتجاج کیوں ہوئے؟ ۔

تفصیلات کے مطابق ملک بھر میں جاری بجلی کی طویل و غیر اعلانہ لوڈشیڈنگ اور پٹرولیم مصنوعات کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کے پیش نظر ٹیلی کام اور انٹرنیٹ سروس فراہم کرنے والی کمپنیوں نے سروس معطلی کا عندیہ دیا۔ بتایا گیا ہے کہ ٹیلی کام کمپنیوں نے پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی کو لکھے گئے مشترکہ خط میں کہا گیا ہے کہ بجلی کے بحران کے باعث ٹیلی کام کمپنیوں کو خدمات جاری رکھنے میں مشکلات کا سامنا ہے۔طویل لوڈشیڈنگ اور بیک اپ آلات کی درآمد میں رکاوٹ کی وجہ سے ٹاور اور تنصیبات کے لیے بیک اپ بجلی کی مسلسل فراہمی ممکن نہیں رہی۔

جس کے باعث ملک میں ٹیلی کام سروسز اور براڈ بینڈ انٹرنیٹ کی سروس معطل ہونے کا خدشہ ہے۔ٹیلی کام کمپنیوں نے کہا ہے کہ طویل و غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کے باعث ان کے لیے سروس کے معیار اور نیٹ ورک کی توسیع سے متعلق لائسنس کی شرائط پوری کرنا مشکل ہو گیا۔دوسری جانب ان کمپنیوں کو ٹیلی کام آلات اور بیک اپ بیٹریاں درآمد کرنے میں بھی مشکلات درپیش ہیں جس کے باعث لوڈ شیڈنگ کے دوران سیلولر ٹاورز کو مہنگے ایندھن پر کی گئی گھنٹے بیک اپ فراہم کرنا مشکل ہے۔ ٹیلی کام کمپنیوں نے پی ٹی اے سے اپیل کی ہے کہ طویل لوڈ شیڈنگ اور آلات کی درآمد پر کیس مارجن کا معاملہ متعلقہ اتھارٹیز کے سامنے اٹھایا جائے اور اس مسئلے کو فوری حل کیا جائے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.