پاکستانفیچرڈ پوسٹ

ضلع کچہری میں سکیورٹی کے ناقص انتظامات، واک تھرو گیٹ ملبے کا ڈھیر، چیکنگ پر مامور پولیس اہلکار سائلین سے مال بٹورنے میں مصروف، ڈی سی او آفس سمیت اہم سرکاری دفاتر کی سکیورٹی دائو پر لگ گئی

سکیورٹی اور چیکنگ پر مامور پولیس اہلکار سائلین سے پیسے بٹورنے کے لئے نت نئے طریقے آزما رہے ہیں جبکہ سکیورٹی نا ہونے کے برابر ہے

ضلع کچہری میں سکیورٹی کے ناقص انتظامات، واک تھرو گیٹ ملبے کا ڈھیر، چیکنگ پر مامور پولیس اہلکار سائلین سے مال بٹورنے میں مصروف، ڈی سی او آفس سمیت اہم سرکاری دفاتر کی سکیورٹی دائو پر لگ گئی

لاہور(رپورٹ: راشد سعید ) صوبائی دارالحکومت میں قائم سب سے بڑی ضلع کچہری میں سکیورٹی کے ناقص انتظامات، واک تھرو گیٹ خراب، ٹائوٹ مافیا کا راج، پیشی پر آنے والے خطرناک قیدیوں کی سرعام ملاقاتیں، اعلیٰ افسران ، جج صاحبان اور وکلاء سمیت آنے والے سائلین کو جان کے لالے پڑ گئے۔ تفصیلات کے مطابق ”کھوج نیوز ”ذرائع نے بتایا ہے کہ صوبائی دارالحکومت میں قائم سب سے بڑی ضلع کچہری جہاں پر ڈی سی او آفس سمیت بہت سے اہم سرکاری دفاتر موجود ہیں ایک سکیورٹی رسک بن چکی ہے ۔ سکیورٹی کے ناقص انتظامات ہونے کی وجہ سے کوئی بھی شخص اسلحہ سے لیس ہو کر یا دہشت گرد باآسانی ضلع کچہری میں داخل ہو سکتا ہے جس کے باعث یہاں پر کوئی بھی بڑا ناخوشگوار واقع پیش آسکتا ہے۔ ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ ضلع کچہری کے 4 مین گیٹ ہیں ایک گیٹ ڈی سی او آفس کی طرف ، دو گیٹ پچھلی سائیڈ پر جبکہ مین گیٹ ڈی آئی جی آپریشنز کے دفتر کے ساتھ ہے۔ ڈی سی او آفس گیٹ کے علاوہ باقی تینوں گیٹوں پر سکیورٹی پر مامور پولیس اہلکار بمشکل سے کچھ ہی گھنٹے ڈیوٹی ایمانداری سے سر انجام دیتے ہیں جبکہ بعد میں سکیورٹی پر تعینات پولیس اہلکار کچہری میں آنے والے سائلین کے کام کروانے کے عوض ان سے ریٹ فکس کرتے ہوئے نظر آتے ہیں اور ایک یا دو پولیس اہلکار جو گیٹ کے ساتھ بنائی گئی چوکی میں بیٹھ کر خوب وخرگوش اور خوش گپیوں میں مصروف نظر آتے ہیں۔ ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ ضلع کچہری میں ناقص سکیورٹی ہونے کی وجہ سے ماضی میں کئی مرتبہ سائلین اور وکلاء سمیت پیشی پر آنے والے قیدیوں پر فائرنگ کے واقعات رونما ہو چکے ہیں ایسے واقعات رونما ہونے کے بعد سکیورٹی کے انتظامات تو سخت کر دیئے جاتے ہیں لیکن باقاعدہ چیکنگ کے انتظامات صرف چند دن تک کی محدود رہتے ہیں جس کے بعد سکیورٹی پر مومار پولیس اہلکار پھر واپس اپنی روٹین میں آ کر ہٹ دھرمی پرقائم ہو جاتے ہیں ۔ ذرائع کا مزید کہنا تھا کہ ضلع کچہری کے مین گیٹ پر واک تھرو گیٹ ہی نصب نہیں کیا گیا ہے جبکہ عدالتوں کی طرف جانے والے راستے پرایک واک تھرو گیٹ اور ضلع کچہری کی بیک سائیڈ سے اندر والے گیٹ پر صرف ایک واک تھرو گیٹ نصب ہے لیکن یہ دونوں گیٹ عرصہ دراز سے خراب ہو چکے ہیں اور ان کو ٹھیک بھی نہیں کروایا جا رہا ہے جبکہ سکیورٹی کے فرائض سرانجام دینے والے پولیس اہلکاروں کے پاس ”میٹل ڈیٹکٹر ” بھی موجود نہیں ہے ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سکیورٹی کی ناقص صورتحا ل ہونے کے باعث لاہور کی سب سے بڑی ضلع کچہری سکیورٹی رسک بن چکی ہے جبکہ اعلیٰ افسران بھی سکیورٹی کے ناقص انتظامات کو نظر انداز کیے ہوئے ہیں جو ایک لمحہ فکریہ ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.