پاکستانفیچرڈ پوسٹ

ایک موقع ایسا بھی تھا جب دورہ ترکی میں سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کو ایک کون سی چیز کھانے سے کیوں روکا گیا ؟ اصل کہانی اب کھل کر سامنے آگئی

سابق پاکستانی سفیر انعام الحق نے سرکاری دورے کے دوران نوازشریف کو ان کے من پسند کباب نہ کھانے دینے کا انتہائی دلچسپ واقعہ سنا دیاہے

ایک موقع ایسا بھی تھا جب دورہ ترکی میں سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کو ایک کون سی چیز کھانے سے کیوں روکا گیا ؟ اصل کہانی اب کھل کر سامنے آگئی ۔

تفصیلات کے مطابق 1999ء کے دوران میں ترکی میں تعینات پاکستانی سفیر نے واقعہ سناتے ہوئے بتایا کہ1999ء میں ترکی میں بہت خوفناک زلزلہ آیا تھا ، چالیس سے پچا س ہزار لوگ مر گئے تھے ، میں اس وقت وہاں سفیر تھا ، زلزلے کے تیسرے روز مجھے اس وقت کے وزیر خارجہ سرتاج عزیز کا فون آیا کہ وزیراعظم نوازشریف ترکوں سے تعزیت کیلئے آنا چاہتے ہیں،میں نے کہا کہ دیکھیں یہاں تو قیامت صغری برپا ہے ، اتنے لوگ ہلاک ہو گئے ہیں کہ ترک حکومت کو سمجھ نہیں آ رہا کہ وہ کیا کریں ، ایسے میں وہ پاکستانی وزیراعظم کی میزبانی کا بھار کس طرح اٹھائیں گے ، انہوں نے بھی کہا کہ میں بھی یہی سمجھانا چاہ رہاہوں لیکن وہ سمجھ نہیں رہے ، آپ ان سے بات کرلیں، میں نے فون کیا تو وہ میرے فون کے منتظر تھے ، انہوں نے کہا کہ میں آ رہاہوں ، میں نے کہا کہ نہیں سر آپ مت آئیں ، ابھی یہ صورتحال ہے ، انہوں نے کہا کہ پھر میں کب آں ، میں نے کہا کہ میں آپ کو بتاں گا ، ایک ہفتے کے بعد ترکوں سے بات کی اور انہوں نے کہا کہ آ جائیں تو وزیراعظم آ گئے ، ترکوں نے ہمیں وہ سارا علاقہ دکھایا ، گھوم گام کر جب شام کو ہوٹل پہنچے تو تھوڑی دیر کے بعد میاں صاحب نے مجھے کہا کہ کباب کھانے چلتے ہیں، استنبول میں ایک کبابی ہے جس کے کباب نوازشریف کو بہت پسند ہیں، وہ یورپ آتے جاتے وہاں پر رک جایا کرتے تھے کباب کھانے کیلئے ، اسے انہوں نے سرکاری مہمان بنا کر پاکستان ایک ہفتے کیلئے بلایا بھی تھا۔

جب انہوں نے کہا کہ چلیں کباب کھانے کیلئے تو میں نے کہا کہ مناسب نہیں ہو گا، انہوں نے کہا کہ کیوںمیں نے جواب دیا کہ آپ ترکوں کو پرسہ دینے آئے ہیں ، اچھا نہیں لگے گا ، آپ جب نکلیں گے تو پورا پروٹوکول چلے گا، آوٹ رائیڈرز سیٹیاں بجاتے چلیں گے، اچھا نہیں لگے گا ، وہ کہنے لگے کہ اچھا کباب یہاں منگوا لیتے ہیں ، میں نے کہا کہ وہ بھی مناسب نہیں ہو گا، انہوں نے پھر کہا کیوں؟ میں نے کہا کہ اس لیے کہ جب وی وی آئی پیز کیلئے کھانا آتاہے تو پورا پروٹوکول ہو تاہے ،انٹیلی جنس والے اسے چیک کرتے ہیں ، تو اچھا نہیں ہو گا، ان کا منہ لٹک گیا ، میں نے کہا کہ پریشان نہیں ہو، ہم کل صبح انقرہ جارہے ہیں تو میں اسے کہتاہوں وہ صبح جہاز پر رکھوا دے گا، اگلی صبح جب ہم جارہے تھے تو وہ ایئر پورٹ پر کنویئر بیلٹ پر کھانا جہاز پر رکھوا رہا تھا ، جہاز نے جیسے ہی ٹیک آف کیا، تو میاں صاحب نے کہا کہ کھانا رکھوا دیا ، میں نے کہا کہ رکھوا دیا ، انہوں نے کہا کہ منگوائیے ، تو میاں صاحب نے کبابوں سے پورا پورا انصاف کیا ، میں پریشان تھا کہ یہ اپنا پیٹ بھر رہے ہیں ،انقرہ میں صدر سلمان نے ظہرانہ رکھا ہواہے ، اس وقت کیا کریں گے لیکن وہ جناب اتنے خوش خوراک ہیں کہ انہوں نے لنچ پر بھی پورا پورا انصاف کیا ۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.