پاکستانفیچرڈ پوسٹ

ایک بارپھرپٹرول کی قلت کا خدشہ،ڈیڈ لاک برقرار

ایک بارپھرپٹرول کی قلت کا خدشہ،حکومت اورپٹرولیم ڈیلر ایسوسی ایشن میں ڈیڈ لاک برقرار، 18 جولائی سے تمام پمپس بند کرنے کا اعلان

ملک بھرمیں ایک بارپھرپٹرول کی قلت کا خدشہ،حکومت اورپٹرولیم ڈیلر ایسوسی ایشن میں ڈیڈ لاک برقرار، 18 جولائی سے تمام پمپس بند کرنے کا اعلان مذاکرات میں ہم نے اپنے اخراجات اور آمدنی کا گوشوارہ حکومت کو پیش کردیا ہے، حکومت حالات سے باخبر ہے’ عبدالسمیع خان ملک بھر میں ایک بار پھر پٹرول کی قلت کا خدشہ، حکومت اور پٹرولیم ڈیلر ایسوسی ایشن میں ڈیڈ لاک برقرار، 18 جولائی سے تمام پمپس بند کرنے کا اعلان پر قائم ہے۔
رپورٹ کے مطابق پیٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن اور حکومتی کمیٹی کے درمیان مذاکرات ہوئے، جس میں وفاقی وزیر پیٹرولیم، چیئرمین اوگرا اور سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی موجود تھے۔ مذاکرات میں ایک بار پھر پیٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن نے ٹیکس کے حوالے سے اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے اسے ختم کرنے کا مطالبہ کیا جس پر حکومتی نمائندوں نے فوری جواب دینے سے انکار کیا۔ پیٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین عبد السمیع خان نے بتایا کہ مذاکرات میں ڈیڈلاک برقرار ہے تاہم شاہد خاقان عباسی کی حکومتی کمیٹی میں شمولیت ہمارے لیے خوش آئند ہے۔
انہوں نے کہا کہ مذاکرات میں ہم نے اپنے اخراجات اور آمدنی کا گوشوارہ حکومت کو پیش کردیا ہے، حکومت حالات سے باخبر ہے اور ہمارے مطالبات بھی جائز ہیں جنہیں قبول کرنا ہوگا۔ عبد السمیع خان نے کہا کہ حکومت آرڈینس جاری کرے یا مثبت پیش رفت کرے تو بات آگے بڑھ سکتی ہے، ہم پرامید ہیں کہ جائز مطالبات کی سنوائی ہوگئی، جب تک کوئی نوٹی فکیشن جاری نہیں ہوتا ہم 18 جولائی سے پمپس بند کرنے کی کال واپس نہیں لے سکے۔ انہوں نے کہا کہ 18 جولائی سے پیٹرول پمپس کی ہڑتال اعلان کے مطابق ہوگی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.