پاکستانفیچرڈ پوسٹ

وزیر دفاع خواجہ آصف اور پی ٹی آئی رہنماء اسد عمر میں ٹھن گئی، ایکدوسرے پر ایسے الزامات کی بوچھاڑ کر دی کہ ملکی سیاست میں ایک نیا طوفان برپا ہوگیا

جنرل غلام عمر کا نام حمود الرحمان کمیشن میں آیا اور کمیشن نے غلام عمر کو کرمنل قرار دیا' محمد زبیر کے والد بھی غلام عمر ہیں مگر تاریخ سفاک ہوتی ہے

وزیر دفاع خواجہ آصف اور پی ٹی آئی رہنماء اسد عمر میں ٹھن گئی، ایکدوسرے پر ایسے الزامات کی بوچھاڑ کر دی کہ ملکی سیاست میں ایک نیا طوفان برپا ہوگیا ۔

تفصیلات کے مطابق وزیر دفاع خواجہ آصف نے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اسد عمر کے الزامات پر جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ جنرل غلام عمر کے بیٹے کو کوئی حق نہیں کہ مجھ پر پاکستان سے وفاداری کے حوالے سے سوال کرے۔ خواجہ آصف نے کہا کہ جنرل غلام عمر کا نام حمود الرحمان کمیشن میں آیا اور کمیشن نے غلام عمر کو کرمنل قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ محمد زبیر کے والد بھی غلام عمر ہیں مگر تاریخ سفاک ہوتی ہے ، میرے والد خواجہ صفدر قائداعظم کے ساتھی تھے ،انہوں نے اگر جنرل ضیا ء کا ساتھ دیا تو اس پر میں نے پارلیمنٹ میں معافی مانگی۔

خواجہ آصف نے کہا کہ عمران خان نے بھارت میں بیٹھ کر اداروں کے خلاف بات کی ہوئی ہے ، برطانیہ میں بیٹھ کر بات کی ہوئی ہے ، شہباز گل کا بیان اسکرپٹڈ ہے ، مگر ان پر تشدد نہیں ہونا چاہیے ۔ انہوں نے کہا کہ میری جماعت میں فرسٹریشن موجود ہے ، مگر ایک ڈیڑھ ماہ میں معاشی صورت حال بہتر ہو جائے گی۔ نوازشریف کے ساتھ غلط ہوا۔ ہم چاہتے ہیں کہ وہ واپس آئیں اور ان کے ساتھ کی گئی زیادتی کا ازالہ ہو،اس کے لیے کوئی جلد بازی نہیں کرنا چاہتے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.