پاکستانفیچرڈ پوسٹ

منی بجٹ، وفاقی حکومت نے پرتعیش سامان پر نئی پالیسی لانے کا فیصلہ، بڑی گاڑیوں کی درآمد اور مہنگے موبائل فونز پر کتنے فیصد ریگولیٹری ٹیکس عائد کیا جا رہا ہے؟ پتا چل گیا

وفاقی حکومت نے بڑی گاڑیوں کی درآمد پر500 فیصد اور مہنگے موبائل فونز پر100 فیصد ریگولیٹری ڈیوٹی عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے

منی بجٹ، وفاقی حکومت نے پرتعیش سامان پر نئی پالیسی لانے کا فیصلہ، بڑی گاڑیوں کی درآمد اور مہنگے موبائل فونز پر کتنے فیصد ریگولیٹری ٹیکس عائد کیا جا رہا ہے؟ پتا چل گیا ۔

وفاقی حکومت نے منی بجٹ میں پرتعیش سامان پر نئی پالیسی لانے کا فیصلہ کرلیا ہے، بڑی گاڑیوں کی درآمد پر500 فیصد اور مہنگے موبائل فونز پر100 فیصد ریگولیٹری ڈیوٹی عائد کی جائے گی۔ وفاقی حکومت نے منی بجٹ کے حوالے سے2دن میں آرڈیننس جاری کرنے کا فیصلہ کرلیا، آرڈیننس کی منظوری اقتصادی رابطہ کمیٹی سے لی جائے گی، ای سی سی کا اجلاس آج کسی بھی وقت بلائے جانے کا امکان ہے۔ آرڈیننس میں آئی ایم ایف کی شرائط پوری کی جائیں گی، بجلی کی قیمتوں ، پیٹرولیم کے نرخوں اور ایف بی آر ٹیکسز کا طریقہ کار کو بدلا جائے گا۔بجلی کی قیمتوں ، پیٹرولیم کے نرخوں اور ایف بی آر ٹیکسز پر نظرثانی ہوگی، بجلی کے بلوں پر ٹیکس اور سبسڈی پر ٹیکس کے طریقہ کار کو بدلا جائے گا۔ آرڈیننس میں چھوٹے دکانداروں سے ٹیکس لینے کا طریقہ کار بھی بدلا جائے گا، پرتعیش سامان پر نئی پالیسی لائی جائے گی، بڑی گاڑیوں کی درآمد پر 500 فیصد تک ریگولیٹری ڈیوٹی لگائی جائے گی، بجلی کے بلوں میں ٹیکس کے طریقہ کار کو بدلا جائے گا، ابھی تک دی جانے والی بجلی پر سبسڈی کی مقدار میں ردوبدل کیا جائے گا۔ مہنگے موبائل فونز پر بھی 100فیصد ریگولیٹری ڈیوٹی عائد ہوگی، سگریٹ پر فی ہزار سٹکس کا ٹیکس 1000 سے 2050 روپے کردیا جائے گا۔ سپیئر پارٹس پر موجودہ ڈیوٹی برقرار رکھی جائے گی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.