پاکستانفیچرڈ پوسٹ

پنجاب حکومت نے مسلم لیگی رہنمائوں کے خلاف انتقامی کارروایئوں کا آغاز کر دیا، کتنے لیگی رہنمائوں کیخلاف ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے گئے؟ پتا چل گیا

پنجاب اسمبلی میں ہنگامہ آرائی کا مقدمہ12 لیگی رہنماؤں کیخلاف درج کیا گیا' پولیس نے ہنگامہ آرائی کیس وارنٹ گرفتاری کے لیے رجوع کیا

پنجاب حکومت نے مسلم لیگی رہنمائوں کے خلاف انتقامی کارروایئوں کا آغاز کر دیا، کتنے لیگی رہنمائوں کیخلاف ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے گئے؟ پتا چل گیا ۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب حکومت نے مسلم لیگ ن کے رہنمائوں کیخلاف انتقامی کارروائیوں کا آغاز کر دیا ہے جس کے بعد جوڈیشل مجسٹریٹ کینٹ مدثر حیات نے لیگی رہنماؤں کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دئیے۔پنجاب اسمبلی میں ہنگامہ آرائی کا مقدمہ 12 لیگی رہنماؤں کے خلاف درج کیا گیا۔ پولیس نے ہنگامہ آرائی کیس وارنٹ گرفتاری کے لیے رجوع کیا۔لیگی رہنماؤں پر اسمبلی میں توڑ پھوڑ،املاک کو نقصان پہنچانے کا الزام ہے۔ مقدمے میں نامزد 12 لیگی رہنماؤں کے وارنٹ گرگرفتاری کاری کر دئیے گئے ہیں۔ پولیس نے لیگی رہنماؤں کی وارنٹ گرفتاری کے لیے درخواست دائر کی تھی۔درخواست میں کہا گیا کہ ملزمان کو گرفتار کرکے تفتیش مکمل کرنی ہے۔ملزمان دانستہ طور پر پیش نہیں ہو رہے۔پولیس نے عدالت سے عطا اللہ تارڑ، رانا مشہور اور اویس لغاری کی گرفتاری کی اجازت مانگ لی۔ سیف الملوک کھوکھر و دیگر کو بھی گرفتار کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.