پاکستانفیچرڈ پوسٹ

عمران خان کا آرمی چیف کی تقرری اور نئے آرمی چیف کی تعیناتی کے متعلق متنازع بیان، خواجہ آصف نے چیئرمین پی ٹی آئی کو کھلا چیلنج کر کے مخالفین کی بولتی بند کر دی

عمران خان بتائیں کہ آرمی چیف کا تقرر کب میرٹ کے بغیر کیا گیا' عمران خان نے اپنی بات کو نئے معنی و مطالب دینے کی کوشش کی

عمران خان کا آرمی چیف کی تقرری اور نئے آرمی چیف کی تعیناتی کے متعلق متنازع بیان، خواجہ آصف نے چیئرمین پی ٹی آئی کو کھلا چیلنج کر کے مخالفین کی بولتی بند کر دی ۔

تفصیلات کے مطابق وزیر دفاع خواجہ آصف نے کہا ہے کہ گزشتہ دنوں عمران خان نے آرمی چیف کے تقرر سے متعلق ایک متنازع بیان دیا اور پھر کل انہوں نے اپنے بیان کی وضاحت دینے کی کوشش کی کل انہوں نے اپنی بات کو نئے معانی و مطالب دینے کی کوشش کی۔ خواجہ آصف نے کہا کہ عمران خان بیانات ایک سوچی سمجھی حکمت عملی کے تحت دے رہے ہیں پہلے اداروں پر حملہ کیا جاتا ہے ، ان کو متنازع بنانے کی کوشش کی جاتی ہے، ان کی کوشش ہے کہ اداروں کو مضمحل کیا جائے اور ری ایکشن دیکھا جائے، اور اس کے بعد اس میں کچھ جمع تفریق کرکے کہا جائے کہ میں نے تو میرٹ کی بات کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ میرے ہوش میں آج تک ، ایک دو کے علاوہ پاک فوج میں ہونے والے تمام تقرر و تبادلے میرٹ پر ہوئے ہیں فوج کی قیادت کی جانب سے سنیئرترین افسران کے جو بھی چار یا پانچ نام آتے ہیں، ان افسران میں سے وزیراعظم اپنی مشاورت اور کنسلٹیشن کے ساتھ آرمی چیف، نیول چیف یا ایئر چیف تعینات کردیتے ہیں۔

وزیر دفاع نے کہا عمران خان نے کل اپنے بیان پر قلابازی کھانے کی کوشش کی یہ جان بوجھ کر ایسے بیانات دے رہا ہے کہ پہلے بیان دیا جائے، جب ری ایکشن آئے تو کہا جائے کہ میرا یہ مطلب نہیں تھا انہوں نے کہاکہ پہلے نواز شریف کے منتخب کردہ بندے کی توثیق کرتے ہیں، اس کی تعریفیں کرتے ہیں اور آج کہتے ہیں کہ نواز شریف اور آصف زرداری اپنی کرپشن کے تحفظ کے لیے تقرر کر رہے ہیں جب کہ اس طرح کی کوئی بات نہیں ہے۔ انہوں نے کہا ملک میں ادارے موجود ہیں جو اس کی کرپشن کی تحقیقات کر رہے ہیں اور فارن فنڈنگ سمیت دیگر کیسز کی یہ تحقیقات کافی آگے بڑھ چکی ہیں، یہ تمام چیزیں سامنے آئیں گی اور زیادہ دیر نہیں لگے گی کہ ان سب چیزوں کا حساب ہوگا۔ ان پر ہاتھ تب ڈالیں گے جب ہمارے پاس پکے ثبوت اور مضبوط شواہد ہوں گے وزیر دفاع نے کہا کہ رانا ثنااللہ کی گرفتاری کے وقت نارکوٹکس کی وزارت میں جو جنرل تعینات تھے، اس معاملے پر ان کا ورژن اور نکتہ نظر بھی سامنے آنا چاہیے، اس معاملے کی تحقیقات ہونی چاہیے اور ملوث لوگوں کا احتساب ہونا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کا کوئی رہنما کہتا ہے کہ مجھے ان کے بیان کا سیاق و سباق نہیں پتا، پرسوں پی ٹی آئی سے تعلق رکھنے والے صدر مملکت عارف علوی نے بھی عمران خان کے بیان سے اظہار لا تعلقی کیا وزیر دفاع نے کہا کہ سابق وزیراعظم بتائیں کہ پاکستان آرمی میں کب میرٹ پر تعیناتی نہیں ہوئی، ہماری حکومت کی جانب سے کی گئی آخری تعیناتی جو کہ موجودہ آرمی چیف کی ہے، اس تعیناتی کی انہوں نے توثیق کی ہوئی ہے۔ خواجہ آصف نے کہا کہ آج جب کہ اقتدار نہیں رہاتو افواج پاکستان کی پوری قیادت پر حملہ کر رہے ہیں اور جان بوجھ کر آنے والی عسکری قیادت سے متعلق شکوک وشبہات پیدا کر رہے ہیں انہوں نے کہا کہ عمران خان میرٹ کی بات کرتے ہیں ، بتائیں کیا عثمان بزدار، وزیر کے پی کا تقرر میرٹ پر کیا گیا ہے ، بی آر ٹی، انکوائری بند کرادی، توشہ خانہ کے تحائف کا جواب نہیں دیتے، برطانیہ کی نیشنل کرائم ایجنسی سے ملنے والے 180ملین پانڈ کیوں بحریہ ٹاؤن کے اکاؤنٹ میں چلا گیا، سوہائے میں یونیورسٹی کا جواب نہیں دیتے، کیا یہ سب معاملات میرٹ پر ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.