پاکستان

ایم کیو ایم کے کارکنوں کی نعشیں ملنے کا معاملہ، وفاقی حکومت نے بڑا قدم اٹھا لیا

لاپتہ افراد کی لاشیں ملنے کے واقعے کی مذمت کرتا ہوں' سندھ حکومت سے مل کر واقعے کی تحقیقات کروائینگے اور ذمہ داران کو قانون کے کٹہرے میں لائینگے

متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کے کارکنوں کی نعشیں ملنے کا معاملہ پر وفاقی حکومت نے بڑا قدم اٹھا لیا ، حکومت نے اس معاملہ کی تحقیقات کروانے کا فیصلہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیرداخلہ رانا ثنااللہ اور وفاقی وزیرایازصادق نے ایم کیوایم رہنماؤں سے ملاقات کی۔ وفاقی وزراء نے ایم کیو ایم رہنماؤں امین الحق اور خالد مقبول صدیقی سے ملاقات کی اور یقین دہانی کرائی کہ وفاقی حکومت ایم کیوایم کارکنوں کی موت کی تحقیقات یقینی بنائے گی۔ وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ کا کہنا تھاکہ لاپتہ افراد کی لاشیں ملنے کے واقعے کی مذمت کرتا ہوں۔ ان کا کہنا تھاکہ سندھ حکومت سے مل کر واقعے کی تحقیقات کروائیں گے اور ذمہ داران کو قانون کے کٹہرے میں لائیں گے۔

دوسری جانب ایم کیو ایم کے ترجمان کے مطابق گزشتہ روز سے اب تک ایم کیو ایم کے 3 لاپتہ کارکنان کی لاشیں مل چکی ہیں، تینوں کارکنان کی لاشیں سندھ کے مختلف علاقوں سے ملیں۔ ترجمان کا کہنا ہے کہ لیاری سیکٹر کے کارکن عابد عباسی کی لاش نوابشاہ اور شاہ فیصل سیکٹر کے کارکن وسیم راجو کی لاش میرپورخاص سے ملی جبکہ گزشتہ روز عرفان بصارت کی لاش سانگھڑ سے ملی تھی۔ ترجمان نے بتایا کہ تینوں کارکنان 2015 سے 2016 کے درمیان کراچی سے لاپتہ ہوئے تھے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.