پاکستانفیچرڈ پوسٹ

وزیراعظم کی مبینہ آڈیو لیک کا معاملہ، پی ٹی آئی ارکان کے استعفوں سے متعلق اہم گفتگو بھی سامنے آگئی، کیا گفتگو ہوئی؟ سنسنی پھیلا دینے والی حقیقت سامنے آگئی

ایک مبینہ آڈیو ٹیپ میں پاکستان تحریک انصاف کے مستعفی ارکان کے استعفوں سے متعلق حتمی منظوری لندن سے لیے جانے کا انکشاف ہوا ہے

وزیراعظم کی مبینہ آڈیو لیک کا معاملہ، پی ٹی آئی ارکان کے استعفوں سے متعلق اہم گفتگو بھی سامنے آگئی، کیا گفتگو ہوئی؟ سنسنی پھیلا دینے والی حقیقت سامنے آگئی ۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم آڈیو میں مبینہ طور پر وزیراعظم شہباز شریف، وزیر داخلہ رانا ثنااللہ، وزیر دفاع خواجہ آصف اور سابق اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق سمیت دیگر رہنماں کی آوازیں ہیں، لیک آڈیو میں پی ٹی آئی ارکان کے استعفوں کی منظوری کے لیے لندن سے اجازت لینے پر بھی گفتگو کی گئی۔ ذرائع کے مطابق ایک مبینہ آڈیو ٹیپ میں پاکستان تحریک انصاف کے مستعفی ارکان کے استعفوں سے متعلق حتمی منظوری لندن سے لیے جانے کا انکشاف ہوا ہے، لیک ہونے والی مبینہ آڈیو لیک میں ایک نامعلوم شخص کو کہتے ہوئے سنا جاسکتا ہے کہ تیس تیس ارکان کو نوٹس دے رہے ہیں، جس پر ایاز صادق نے کہا ہم لسٹ بنا کر دیں گے کہ کس کس کو ملنا ہے، اس کی اپروول لیڈرشپ دے گی۔

انہوں نے کہا کہ 6 تاریخ کوجن 30 لوگوں نے پیش ہونا ہے ان میں سے چھ، سات کے استعفے قبول کر لیں گے، جن کے استعفے قبول نہیں کرنے کہہ دیں گے کہ دستخط ٹھیک نہیں تھے۔ اس پر رانا ثنا اللہ نے کہا کہ وہ لوگ دوبارہ ہاس میں آئیں استعفے دینے، اس معاملے کو میاں صاحب سے کلیئر کروا لیں گے، مبینہ آڈیو میں خواجہ آصف کو کہتے ہوئے سنا جاسکتا ہے کہ 6 تاریخ کے بعد ہمارے پاس اختیار ہوگا کہ کسے رکھنا ہے اور کسے نہیں جب کہ وزیر اعظم نے کہا کہ اگر اسی طرح چار یا پانچ روز نکلتے جائیں گے تو ان میں کھلبلی مچ جائے گی، میری گزراش ہے کہ اس میں دیر نہ کریں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.