پاکستان

بائیڈن کا بیان، امریکی سفیر کی دفتر خارجہ طلبی، وضاحت طلب

پاکستان نے امریکی سفیر کو احتجاجی مراسلہ تھما دیا ہے، امریکی سفیر سے مراسلے کے ذریعے امریکی صدر کے بیان پر وضاحت کا بھی کہا گیا ہے

امریکی صدر بائیڈن کے پاکستان کے ایٹمی اثاثوں سے متعلق بیان کے معاملے پر امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم کو دفترخارجہ طلب کرکے وضاحت طلب کرلی گئی۔

تفصیلات کے مطابق سفارتی ذرائع کا کہنا تھا کہ پاکستان نے امریکی سفیر کو احتجاجی مراسلہ تھما دیا ہے، امریکی سفیر سے مراسلے کے ذریعے امریکی صدر کے بیان پر وضاحت کا بھی کہا گیا ہے۔ سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ امریکی سفیر کو پاکستان کے مؤقف سے آگاہ کیا گیا اور انہیں پاکستان کے ایٹمی اثاثہ جات کی حفاظت سے متعلق بھی آگاہ کیا گیا۔ خیال رہے کہ امریکی صدر نے الزام عائدکیا ہے کہ پاکستان خطرناک ترین ممالک میں سے ایک ہے اور پاکستان کا ایٹمی پروگرام بے قاعدہ ہے، اس بات کا خدشہ ہیکہ اسے کوئی بھی استعمال کرسکتا ہے۔

امریکی صدر کے بیان سے متعلق سوال پر ردعمل دیتے ہوئے وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا، صدر بائیڈن کے بیان کے حوالے سے امریکی سفیر کو طلب کر کے ڈیمارش کیا جائے گا۔ وزیر خارجہ کا کہنا تھا امریکی صدر کا بیان حیران کن ہے لیکن پاکستان اپنی سالمیت کے بقا کے لیے پرعزم ہے، اگر کسی ملک کے جوہری ہتھیاروں کے بارے میں سوال اٹھتا ہے تو وہ بھارت ہے، ہماری خارجہ پالیسی کی سمت درست ہے۔ انہوں نے مزیدکہا کہ ہمارے ایٹمی اثاثے محفوظ اور تمام عالمی قوانین کے مطابق ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.