پاکستانفیچرڈ پوسٹ

عمران خان کا آرمی چیف، حساس اداروں کی قیادت اور چیف الیکشن کمشنر سمیت دیگر کو نشانہ بنانے کا مقصد کیا ہے؟ اتحادی جماعتوں نے ایسا راز فاش کر دیا کہ …؟

وزیراعظم پاکستان قانون کے مطابق آرمی چیف کی تقرری کا فیصلہ کریں گے، فارن فنڈڈ فتنے کی دھونس، دھمکی اور ڈکٹیشن پر نہیں ہوگی

عمران خان کا آرمی چیف، حساس اداروں کی قیادت اور چیف الیکشن کمشنر سمیت دیگر کو نشانہ بنانے کا مقصد کیا ہے؟ اتحادی جماعتوں نے ایسا راز فاش کر دیا کہ …؟۔

تفصیلات کے مطابق حکومت کی اتحادی جماعتوں نے اپنے مشترکہ اعلامیے میں سابق وزیر اعظم عمران خان پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ آرمی چیف، حساس اداروں کی قیادت، افسران، چیف الیکشن کمشنر سمیت دیگر کو نشانہ بنانے کا مقصد بلیک میلنگ ہے جو قطعا سیاسی رویہ نہیں بلکہ سازش کا حصہ ہے جسے کامیاب نہیں ہونے دیا جائے گا۔

مشترکہ بیان میں کہا گیا ہے کہ وزیراعظم پاکستان قانون کے مطابق آرمی چیف کی تقرری کا فیصلہ کریں گے، فارن فنڈڈ فتنے کی دھونس، دھمکی اور ڈکٹیشن پر نہیں ہوگی۔ آئین اور قانون میں واضح ہے کہ آرمی چیف سمیت دیگر عہدوں پر تقرری وزریراعظم کا دستوری اختیار ہے۔ حکومت کی اتحادی جماعتوں نے مشترکہ طور پر عمران خان کا الیکشن جلد کرانے کا مطالبہ دوٹوک طور پر مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک میں انتخابات کب ہونے ہیں، اس کا فیصلہ حکومتی اتحادی جماعتیں کریں گی۔ کسی جتھے کو طاقت کی بنیاد پر فیصلہ مسلط کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔ قانون ہاتھ میں لینے والوں کو آئین اور قانون کے مطابق نمٹیں گے۔ اس بیان میں سابق صدر آصف علی زرداری، پاکستان مسلم لیگ ن کے قائد اور سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف بیان اور الزامات کی میں مذمت کی گئی ہے۔

حکومتی اتحاد کا کہنا ہے کہ اقتدار سے محروم شخص قومی اداروں کو ایک سوچے سمجھے ایجنڈے کے تحت نشانہ بنا رہا ہے۔ پاک فوج کے شہدا کے خلاف غلیظ مہم، فوج میں بغاوت کے بیانات اور حوصلہ افزائی جیسے اقدامات ملک دشمنی کے مترادف ہیں جن سے آئین اور قانون کے مطابق نمٹا جائے گا۔ غنڈہ گردی اور دھونس کی بنیاد پر آئین، جمہوریت اور نظام کو غلام نہیں بننے دیا جائے گا۔ بیان میں یہ بھی واضح کیا گیا کہ ملک کی معیشت اور سیلاب متاثرین کی بحالی اس وقت اولین قومی ترجیح ہے جس پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔ حکومت، اداروں اور عوام کا اتفاق ہے کہ سیاسی عدم استحکام پیدا کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی جبکہ معیشت کو پٹڑی سے اتارنے اور وسائل کی متاثرین سیلاب تک رسائی کے عمل کو کسی صورت متاثر نہیں ہونے دیا جائے گا۔ فتنے کے تکبر کی وجہ سے قومی اسمبلی میں پی ٹی آئی کی 8 نشستیں کم ہوگئی ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.