پاکستانفیچرڈ پوسٹ

سابق وزیراعظم عمران خان پر حملے کے معاملے میں بننے والی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم میں آئی ایس آئی اور ایم آئی کے افسران کو شامل کیوں نہیں کیا گیا؟ تہلکہ مچادینے والی خبر آگئی

سرکاری حکام نے آئی ایس آئی اور ایم آئی کی جانب سے ملے پیغام کی تصدیق کی اور کہا کہ انٹیلی جنس ادارے خود کو کسی تنازع سے بچانا چاہتے ہیں

سابق وزیراعظم عمران خان پر حملے کے معاملے میں بننے والی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم میں آئی ایس آئی اور ایم آئی کے افسران کو شامل کیوں نہیں کیا گیا؟ تہلکہ مچادینے والی خبر آگئی ۔

تفصیلات کے مطابق سرکاری ذرائع کا کہنا تھا کہ خفیہ اداروں کے نمائندوں نے وزارت داخلہ اور پنجاب ہوم آفس کو آگاہ کردیا۔ ذرائع نے بتایا کہ سرکاری حکام کوآگاہی دی گئی کہ تحقیقات میں شامل نہیں ہونگے تاکہ کوئی انگلی نہ اٹھے۔ سرکاری حکام نے آئی ایس آئی اور ایم آئی کی جانب سے ملے پیغام کی تصدیق کی اور کہا کہ انٹیلی جنس ادارے خود کو کسی تنازع سے بچانا چاہتے ہیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز وزیر آباد میں عمران خان پر ہونے والے قاتلانہ حملے میں پی ٹی آئی چیئرمین سمیت 13 افراد زخمی جبکہ ایک شخص جاں بحق ہوا تھا۔ لانگ مارچ میں شریک افراد نے موقع سے ایک شخص کو پکڑ کر پولیس کے حوالے کیا تھا جس کی شناخت نوید کے نام سے ہوئی تھی، بعد ازاں پولیس نے نوید کے گھر والوں کو بھی حفاظتی تحویل میں لے کر تفتیش شروع کر دی تھی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.