سوشل ایشوز

روٹی کی قیمت 10 روپےکیےجانےکا امکان

آٹےکا بحران شدت اختیارگیا ہےجس کےباعث شہریوں کوشدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے

ملک بھرمیں آٹےکا بحران شدت اختیارگیا ہےجس کےباعث شہریوں کوشدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ لاہورمیں آٹےکےبحران کے باعث تندورمالکان نےسادہ روٹی کی قیمت بڑھانےکا فیصلہ کیا ہےجس کےبعد کل سےروٹی کی قیمت 10 روپےکیےجانےکا امکان ہے۔ صدر نان بائی ایسوسی ایشن کہتےہیں کہ 8 روپےکی روٹی کی قیمت بڑھانا مجبوری ہے،ناقص کوالٹی آٹےکی 15 کلوکی تھیلی بھی 950 روپے سےتجاوزکرگئی ہےجب کہ 860 روپےملنےوالا 20 کلوکا بیگ کہیں دستیاب نہیں ہے۔ انہوں نےکہا کہ گزشتہ 10 سال کےدوران روٹی کی قیمت 6 روپےپرہی ٹکی رہی لیکن صرف رواں سال روٹی سمیت ہرشےکی قیمت میں کئی باراضافہ ہوچکا ہے۔

دوسری جانب پشاور میں بھی آٹے کی بڑھتی ہوئی قیمتوں سےشہری پریشان ہیں اوراستطاعت نہ رکھنے والے شہریوں کوسرکاری آٹے کے حصول کے لیے لمبی قطاروں میں کھڑا رہنا پڑتا ہے۔ شہری شناختی کارڈ کی فوٹو کاپی جمع کر کے 20 کلو کا تھیلا 860 روپے میں مخصوص ڈیلرز سے خریدتے ہیں۔ آٹا بحران کی صورتحال پر دکانداروں کا کہنا ہے کہ  آٹا ڈیلرز  پنجاب سے آٹا مہنگے داموں ملنے کا رونا روتے دکھائی دیتے ہیں۔ دکانداروں نے بتایا کہ 20 کلو آٹے کا تھیلا 1320جب کہ فائن آٹے کا تھیلا 1400 روپے میں فروخت کرتے ہیں جس سے وہ صرف 10 سے 15 روپے منافع کماتے ہیں۔ شہریوں کا کہنا ہے کہ سرکاری آٹے کا معیار  بہتر اور کوٹہ دو گنا کیا جائے تاکہ وہ آسانی سے وقت ضائع کیے بغیر آٹا خرید سکیں۔

Back to top button