سوشل ایشوز

زمین بلدیہ عظمی کراچی کی ……چارجڈپارکنگ مافیا پھر سرگرم‘ کروڑوں روپے کمانے لگے

چارجڈ پارکنگ مافیا کے خلاف ایڈمنسٹریٹر کراچی نے ان قبضہ مافیا کے خلاف کریک ڈاؤن کے احکامات بھی جاری کر دیئے ہیں

کراچی میں زمین بلدیہ عظمی کی ہے لیکن فائدہ پارکنگ مافیا اٹھا رہا ہے 162 مقامات پر غیر قانون طور پر کروڑوں روپے کی پارکنگ وصول کی جا رہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں جو کام سب سے آسان ہے وہ ہے چارچڈ پارکنگ کا ہرکارا بننا، بس ایک جیکٹ اور ایک کیپ، ہاتھ میں پرچی اور شہری حکومت کا اہلکار تیار، اب کہیں بھی کھڑے ہو جائیں او ر پارکنگ کی مد میں ملنے والے پیسے آپ کی جیب میں، یہ چند لوگ نہیں بلکہ پورا ایک مافیا ہے۔ اس دو نمبری کا انکشاف بلدیہ عظمی کی تحقیقاتی رپورٹ میں ہوا ہے جس کے مطابق جاری کروڑوں روپے شہری حکومت کے اکانٹس میں آہی نہی رہے۔ شہر میں کے ایم سی کے تحت کل 196 مقامات پر پارکنگ فیس وصول کی جارہی ہے لیکن ان میں سے صرف 34 مقامات ہی ریکارڈ کا حصہ ہیں، یوں 162 مقامات پر وصول کی جانے والی پارکنگ فیس مافیاز کا پیٹ بھر رہی ہیں۔ ایڈمنسٹریٹر کراچی لئیق احمد کہتے ہیں کہ بس ا ب ایسے نہی چلے گا، تحقیقات کے مطابق مالی بحران کے شکار بلدیہ عظمی کی موجودہ 34 سائٹس بھی مقررہ اہداف حاصل نہیں کرپائیں اور ریونیو کی مد میں چھ کروڑ کی بجائے سالانہ دو کروڑ ہی جمع کراتی ہیں۔

متعلقہ خبریں