سوشل ایشوز

تین بچوں کی ماں کو کھلے عام ہراساں کیا جانے لگا، پولیس شرپسند عناصر کے سامنے خاموش تماشائی بن گئی

گھر میں تعمیری کام کے دوران شرپسند عناصر نے انہیں ہراساں کرنا شروع کیا اور پولیس بھی ان کے خلاف کارروائی کرنے سے انکاری ہے

شاہدرہ کی خاتون کو بھی ہراساں کیا جانے لگا، بااثر مافیا کی شوہر کو بھی جانے سے مارنے کی دھمکیاں۔ کھوج نیوز ذرائع کے مطابق شاہدرہ کی رہائشی خاتون زبیدہ کو بااثر مافیا مسلسل ہراساں کرنے لگا ہے۔ شکایت کرنے پر پولیس کا بھی مقدمہ درج کرنے سے انکار، خاتون نے وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار اور آئی جی پنجاب سے داد رسی کی اپیل کر دی۔ ہراسمنٹ کا شکار خاتون کو پولیس اہلکاروں کی موجودگی میں سنگین نتائج کی دھمکیاں دی گئی ہیں جبکہ اس کے شوہر کو بھی جان سے مارنے کی دھمکیاں دی جا رہی ہیں۔ زبیدہ نے بتایا کہ میں سلیم گارڈن گلشن کالونی شاہدرہ میں واقع اپنی رہائش گاہ کے گیراج کے لیے جگہ تعمیر کروا رہی تھی کہ شرپسند عناصر نے انہیں ہراساں کرنا شروع کر دیا اور تاحال پولیس بھی ان کے خلاف کارروائی کرنے سے انکاری ہے۔ زبیدہ تین بچوں کی ماں ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button