سوشل ایشوزفیچرڈ پوسٹ

پولیس وردی میں چھپا کالا بھیڑیا بے نقاب، کئی سالوں سے اسلحہ کی سمگلنگ کرنے والا پولیس ملازمین رنگے ہاتھوں پکڑا گیا، ملزم نے اعتراف جرم کر لیا

ماڈل تھانے میں تعینات کانسٹیبل عباس پر خیبرپختونخوا سے 10 پستول کراچی لاکر بیچنے کا الزام ہے: پولیس کا مؤقف

پولیس وردی میں چھپا کالا بھیڑیا بے نقاب، کئی سالوں سے اسلحہ کی سمگلنگ کرنے والا پولیس ملازمین رنگے ہاتھوں پکڑا گیا، ملزم نے اعتراف جرم بھی کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلحہ کی اسمگلنگ میں ملوث پولیس اہلکار کو گرفتار کرکے متعدد پستول برآمد کرلیے گئے۔ پولیس کے مطابق ماڈل تھانے میں تعینات کانسٹیبل عباس پر خیبرپختونخوا سے 10 پستول کراچی لاکر بیچنے کا الزام ہے، عباس 2016 میں پولیس میں بھرتی ہوا اور 2 سال سے کلفٹن میں تعینات تھا۔ پولیس کے مطابق عباس نے اعترافی بیان میں بتایا کہ دسمبر 2020 میں شادی میں شرکت کے لیے اپنے آبائی شہر نوشہرہ گیا جہاں سے واپسی پر5 پستول کراچی لایا جس میں سے ایک پستول کیماڑی میں میڈیکل اسٹور کے مالک کو فروخت کیا تھا جب کہ 2 پستول کٹی پہاڑی پرایف بی آر کالونی کے رہائشی کو دیے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم نے 2 پستول اپنے اور دوست فیصل کے اسلحہ لائسنس پر اندراج کرائے، ملزم کے قبضے سے متعدد پستول برآمد کیے گئے جب کہ دیگر دو ملزمان کو گرفتار کرکے ان کے قبضے سے بھی 3 پستول برآمد کرلیے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button