سوشل ایشوزفیچرڈ پوسٹ

گھر کی تلاش میں قصور سے لاہور آنے والی خاتون کے ساتھ کیا سلوک کیا گیا؟ کون کون ذمہ دار نکلا؟ لرزہ خیز واردات کرنے والے تمام کردار بے نقاب ہو گئے

قصور سے گھر ڈھونڈنے کیلئے لاہور آئی خاتون سے 5افراد کی جنسی زیادتی، پراپرٹی ڈیلر نے اپنے دوستوں سے ملکر جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا

گھر کی تلاش میں قصور سے لاہور آنے والی خاتون کے ساتھ کیا سلوک کیا گیا؟ کون کون ذمہ دار نکلا؟ لرزہ خیز واردات کرنے والے تمام کردار بے نقاب ہو گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق میر انام ساجدہ بی بی ہے، میں لاہور میں گھر لینے کیلئے آئی تھی، میں نے اپنی بچی کا سکول میں داخلہ کروانا تھا۔ میرا رابطہ ایک فرینڈ کے ذریعے اس پراپرٹی ڈیلر سے ہوا تھا، اس نے کہا ایک پراپرٹی ڈیلر ہے اس کی سوسائٹی ہے، اس سے گھر کا پوچھ لیں، وہ دو تین ہفتے میرے ساتھ بات کرتا رہا، میں لاہور آئی تو مجھے عابد مارکیٹ سے پاک عرب سوسائٹی لے کرگیا، اس کی گاڑی میں دواور بھی لوگ تھے۔ وہ مجھے اپنے ساتھ گاڑی میں لے کر گیا، پاک عرب سوسائٹی میں بیکری سے فریش جوس بنوایا، میں نے کہا میں نے نہیں پینا، کہتا آپ ہماری مہمان ہیں، میں نے جوس پیا تو میری حالت خراب ہوگئی۔ مجھے ایک گھر میں لے گیا، وہاں اور بھی تین لوگ تھے۔ مجھے وہاں سب نے جنسی زیادتی کی، مجھ پر تشدد بھی کیا، جنسی زیادتی کے بعد مجھے جیل روڈ پر پھینک دیا، وہاں میں نے اپنے جاننے والے کو فون کیا، وہاں آیا اور مجھے گھر لے گیا، جنسی زیادتی کرنے والوں میں نعیم، خواجہ، نیامت، محمد انس اور بھولا شامل تھے۔نیامت رضا مرکزی ملزم ہے۔وکیل نے بتایا کہ21 نومبر کا وقوعہ ہے، چونگی امرسدھو میں ان کے عزیز ہیں، انہوں نے پراپرٹی ڈیلر کا نمبر دیا، پولیس نے فون پر مسیجز بھی دیکھے، یہ قرطبہ چوک پہنچی تو وہاں سے ڈیلر نے ساتھ لیا، اس کا میڈیکل ہوا، جس میں ثابت ہوا کہ دو لوگوں نے زیادتی کا نشانہ بنایا۔ میڈیکل میں نظر آرہا ہے کہ درندوں نے خاتون کی گردن کو ناخنوں اور دانتوں سے بھی نوچا، جو کہ میڈیکل میں ثابت ہوا ہے۔مرکزی ملزم نے اپنی عبوری ضمانت کروالی ہے۔ ہائیکورٹ سے ان کی ضمانت خارج ہوگئی۔ ملزم کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button