سوشل ایشوزفیچرڈ پوسٹ

ملتان میں عطائی ڈاکٹروں کی بھرمار، ایک اورعطائی ڈاکٹر نے 2 معصوم بچوں کی جان لے لی، کھانسی اور بخار کی دوائی دینے کی بجائے مبینہ غلط دوائی دیدی، ڈاکٹر گرفتار، کلینک سیل

دوا کھاتے ہی بچوں کی حالت غیر‘ایک گھنٹے میں ہی 11 سالہ بیٹا دانش اور 8 سالہ بیٹی سائرہ دم توڑ گئی‘تیسرا بیٹا5 سالہ منیب آئی سی یو میں منتقل

ملتان میں عطائی ڈاکٹروں کی بھرمار، ایک اورعطائی ڈاکٹر نے 2 معصوم بچوں کی جان لے لی، کھانسی اور بخار کی دوائی دینے کی بجائے مبینہ غلط دوائی دیدی، ڈاکٹر گرفتار، کلینک سیل کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق پولیس کا کہنا ہے کہ حامد پور کنورا کا رہائشی محمد اقبال نے اپنے تین بچوں کے لیے کھانسی اور بخار کی دوا لی تھی۔ بچوں کے والد کا کہنا ہے کہ دوا کھاتے ہی بچوں کی حالت غیر ہو گئی اور ایک گھنٹے میں ہی 11 سالہ بیٹا محمد دانش اور 8 سالہ بیٹی سائرہ دم توڑ گئی جب کہ تیسرا بیٹا5 سالہ منیب کو فوری طور پرنشتر اسپتال کے آئی سی یو وارڈ منتقل کر دیا گیا۔ واقعے پر وزیراعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر ڈپٹی کمشنر علی شہزاد اور محکمہ صحت کے افسران نے بچوں کے والد سے ملاقات کی،جس کے بعد عطائی ڈاکٹرکو گرفتار کرکے کلینک سیل کردیا گیا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.