سوشل ایشوز

پاکپتن میں زہریلا کھانا کھانے کی وجہ سے چار بچوں اور ماں کی ہلاکت کا معاملہ، واردات کس نے ڈالی؟ حیران کن سچ سامنے آگیا

اس کی ممانی نے کسی بات پر ڈانٹا تھا جس کے غصے میں کھانے میں علی کی مدد سے زہریلی گولیاں ملانے کا منصوبہ بنایا: ملزم کا اعتراف

پاکپتن میں چند روز قبل پراٹھوں کے ساتھ اچار کا ناشتہ کرنے والی ماں اور چار بچے ہلاک ہو گئے تھے، پولیس نے تحقیقات کے بعد کمسن حمزہ اور علی عظیم کو گرفتار کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق عارف والا کے نواحی گاؤں کے را توفیق کی بیوی اور چار بچے چند روز زہریلا کھانا کھانے کے باعث تشویشناک حالت میں ہسپتال پہنچ گئے تھے جہاں تمام متاثرین نے دم توڑ دیاتھا۔پولیس نے فرانزک کے لئے اچار، گھی، پراٹھوں کے ٹکڑوں سمیت دیگر سامان فرانزک لیب بھجوایا جہاں سے کھانے میں زہر کے شواہد ملے، پولیس نے تحقیقات شروع کیں تو را توفیق کے کمسن بھانجے حمزہ اور علی کو گرفتار کرلیا۔ ذرائع کے مطابق ملزم حمزہ نے اعتراف جرم کرتے ہوئے بتایا کہ اس کی ممانی (مقتولہ بیگم را توفیق)نے کسی بات پر ڈانٹا تھا جس کے غصے میں کھانے میں علی کی مدد سے زہریلی گولیاں ملانے کا منصوبہ بنایا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.