سوشل ایشوزفیچرڈ پوسٹ

لاہور میں خواتین سے زیادتی اور بد سلوکی کے واقعات میں مسلسل اضافہ، ایک اور افسوسناک واقعہ سامنے آنے کے بعد قانون کی بے حسی کا منہ بولتا ثبوت سامنے آگیا

عمر فاروق اور منصب نامی دونوں ملزم پکڑ لیے، ملزم عمر کیخلاف پہلے بھی تھانہ نواب ٹاؤن اور اوکاڑہ کے میں خواتین سے زیادتی کے مقدمات درج ہیں

لاہور میں خواتین سے زیادتی اور بد سلوکی کے واقعات میں مسلسل اضافہ، ایک اور افسوسناک واقعہ سامنے آنے کے بعد قانون کی بے حسی کا منہ بولتا ثبوت سامنے آگیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے ماں بیٹی سے زیادتی کے 2 ملزمان کو گرفتارکرلیا گیا۔ پولیس کے مطابق میلسی سے لاہور آنے والی ماں بیٹی ٹھوکر نیاز بیگ بائی پاس پر اتریں، جہاں سے وہ آفیسرز کالونی میں اپنی بہن کے گھر جانے کے لیے رکشا پر سوار ہوئیں، رکشا ڈرائیورعمر فاروق اور اس کا ساتھی منصب انہیں ایل ڈی اے ایونیو میں ویران جگہ پر لے گئے جہاں دونوں نے خاتون اور اس کی 15 سالہ بیٹی کو مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنایا۔ ملزمان نے خواتین سے ان کا موبائل فون اور 5 ہزارروپے نقدی بھی چھین لی، ماں بیٹی کے شور مچانے پرملزمان رکشا وہیں چھوڑ کر فرار ہو گئے، پولیس نے خاتون کی درخواست پر مقدمہ درج کیا ہے۔

ڈی آئی جی انویسٹی گیشن شارق جمال نے بتایاکہ عمر فاروق اور منصب نامی دونوں ملزم پکڑ لیے ہیں، ملزم عمر کیخلاف پہلے بھی تھانہ نواب ٹان اور اوکاڑہ کے قصبیحویلی لکھا میں خواتین سے زیادتی کے 2 مقدمات درج ہیں۔ دوسری جانب وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدارنے آئی جی سے واقعے کی رپورٹ طلب کرلی ہے اور حکم دیا ہے کہ متاثرہ ماں بیٹی کو انصاف کی فراہمی میں کوئی کسر اٹھا نہ رکھی جائے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.