سوشل ایشوز

"لڑکی کی خاطر زندگی کی بازی ہار دی”۔۔۔ذیشان دم توڑ گیا

کراچی کے علاقے کورنگی میں دو روز قبل جلایا جانے والا 19 سالہ ذیشان دوران علاج دم توڑ گیا۔

اہل خانہ کا الزام ہے کہ ذیشان کو دھوکے سے بلوا کر پیٹرول ڈال کر آگ لگائی گئی۔

ماں باپ کے اکلوتے بیٹے 19 سالہ ذیشان کو دو روز قبل کراچی کے علاقے کورنگی ابراھیم حیدری میں پیٹرول چھڑک کر آگ لگادی گئی تھی، دو روز زندگی اور موت کی کشمکش میں گھرا ذیشان آج بالآخر زندگی کی بازی ہار گیا۔ذیشان کے والد کا کہنا ہے کہ ذیشان ایک لڑکی سے شادی کرنا چاہتا تھا لیکن لڑکی کے اہل خانہ 4 لاکھ روپے حق مہر اور 5 لاکھ روپے کے طلائی زیورات کا تقاضہ کررہے تھے

موت سے قبل ذیشان نے پولیس کو دیے گئے بیان میں بتایا کہ زینت نامی لڑکی نے اسے 27 تاریخ کو فون کرکے کورنگی بلوایا تھا، دیر رات جب ذیشان مقام پر پہنچا تو زینت کے بھائی اور  شوہر نے اسے تشدد کا نشانہ بنا کر  پیٹرول ڈال کر آگ لگادی۔

پولیس کے مطابق مقتول کا ایف آئی آر میں مؤقف تھا کہ زینت کے کہنے پر اس کے شوہر اور  بھائی نے اسے آگ لگائی۔

مقتول ذیشان کے والد کا الزام ہے کہ زینت نامی لڑکی کی ذيشان سے دوستی تھی، دونوں ساتھ کام کرتے تھے، لڑکی کے بلانے پر ذيشان گیا تو وہاں چار لڑکوں نے اس پر پیٹرول چھڑک کر آگ لگادی اور دیکھتے رہے ، ایک راہ گیر نے آگ بجھاکر ذيشان کو اسپتال پہنچایا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.