سوشل ایشوزفیچرڈ پوسٹ

میو اسپتال میں تعینات سکیورٹی انتظامیہ فرعون بن گئی، مریضوں کے ساتھ آئے لواحقین کو بجا تنگ کرنا، تشدد کرنا معمول بن گیا، تشدد کی ویڈیو وائرل ہونے پر ملزم گرفتار

ملزم اسپتال آنے والے غریب لوگوں پر تشدد کرنے انہیں باہر نکال دیتا, ملزم کی ویڈیو وائرل ہونے پر فوری کارروائی عمل میں لائی گئی

میو اسپتال میں تعینات سکیورٹی انتظامیہ فرعون بن گئی، مریضوں کے ساتھ آئے لواحقین کو بجا تنگ کرنا، تشدد کرنا معمول بن گیا، تشدد کی ویڈیو وائرل ہونے پر ملزم گرفتار کرلیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق میو اسپتال میں عوام الناس پر تشدد کرنے والے ملزم کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔تشدد کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد ایس پی سٹی رضوان طارق نے ملزم کو فوری گرفتار کرنے کی ہدایت کی تھی۔اس پر گوالمنڈی چوکی میو اسپتال پولیس نے بروقت کارروائی کرکے ملزم کو گرفتار کر لیا۔ملزم ذوہیب میو اسپتال میں سکیورٹی سپر وائرز کے طور پر کام کرتا ہے۔

ملزم اسپتال آنے والے غریب لوگوں پر تشدد کرنے انہیں باہر نکال دیتا۔ملزم کی ویڈیو وائرل ہونے پر فوری کارروائی عمل میں لائی گئی۔ملزم ذوہیب کے خلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی گئی۔جب کہ ایس پی سٹی رضوان کا کہنا ہے کہ کسی کو بھی قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دیں گے۔قانون کی بالادستی کو ہر صورت یقنی بنائیں گے۔ عوام الناس کے جا و مال کی حفاظت ہماری اولین ذمہ داری ہے۔

ایم ایس ڈاکٹر افتخار کا کہنا ہے کہ جسمانی تشدد اور ہراساں کرنا کسی صورت قبول نہیں۔فوٹیج میں نظر آنے والے افراد کو فوری معطل کر دیا گیا۔جب کہ ذمہ داران کے خلاف کارروائی کر رہے ہیں۔ایم ایس میو اسپتال نے معاملے کی تحقیقات کے لیے تین رکنی کمیٹی بھی تشکیل دے دی۔کمیٹی کے چئیرمین آڈیشنل ڈائریکٹر ایڈمن میو اسپتال ڈاکٹر خالد بن اسلم جب کہ ممبرز میں آڈیشنل ڈائریکٹر ڈاکٹر زبیر یونس بٹ اور آفس سپرنٹنڈٹ تحسین ضیا بٹ ہو گے۔انکوائری کمیٹی 24 گھنٹوں میں تمام تر تحقیقات کرکے رپورٹ ایم ایس جناح اسپتال کو پیش کرے گی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.