سوشل ایشوز

سحری جگانے والوں کا کام دوبارہ بحال ہوگیا

کورونا کی وبا اورجدید ٹیکنالوجی کےاستعمال نے قدیم سحری جگانے والوں کا کام متاثرکیا

کورونا کی وبا کم ہونے کے بعد امسال رمضان میں سحری جگانے والوں کا کام دوبارہ بحال ہوگیا جب کہ جدید ٹیکنالوجی کے استعمال نے قدیم سحری جگانے والوں کا کام متاثر کیا ہے۔ پنجاب کالونی کے رہائشی فیاض یونس نے بتایا کہ امسال رمضان المبارک میں جہاں دیگر روزگار کورونا کے 2 سال بعد بحال ہوئے ہیں وہی سحری جگانے والے بھی دوبارہ متحرک ہوگئے ہیں لیکن اب ان کی تعداد ایک اندازے کے مطابق پہلے کے مقابلے میں 30 فیصد سے بھی کم رہ گئی ہے۔

انھوں نے بتایا کہ سحری جگانے کا کام اب بھی زیادہ تر وہی افراد کررہے ہیں جن کے آباؤ اجداد یہ کام کیا کرتے تھے انھوں نے کہا کہ بعض افراد اضافی آمدنی کے حصول کے لیے بھی سحری جگانے کا کام کرتے ہیں انھوں نے بتایا کہ سحری جگانے والوں کی نئی نسل یہ کام کرنے کو تیار نہیں اسی لیے یہ پیشہ بھی معدوم ہوتا جارہا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.