کھیل

محمد حفیظ کا ڈومیسٹک سینٹرل کنٹریکٹ لینے سےانکار

محمد حفیظ کےدستبردارہونےکےبعد ریٹینرکنٹریکٹ دیا جائےگا جس میں انہیں تنخواہ تونہیں ملےگی

قومی کرکٹ ٹیم کےمایہ نازآل راونڈرمحمد حفیظ نےڈومیسٹک سینٹرل کنٹریکٹ لینے سےانکارکرتےہوئےکہا ہےکہ نوجوان کھلاڑی اس کے حقدارہیں۔  تفصیلات کےمطابق محمد حفیظ کےدستبردارہونےکےبعد ریٹینرکنٹریکٹ دیا جائےگا جس میں انہیں تنخواہ تونہیں ملےگی تاہم میچ فیس اورڈیلی الاﺅنس دیئےجائیں گے۔ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے 39 سالہ محمد حفیظ کوایک لاکھ سےزائد کا ماہانہ کنٹریکٹ آفرکیا تھا لیکن ’پروفیسر‘ کےلقب سےمشہورکھلاڑی نےفیصلہ کیا کہ یہ کنٹریکٹ کسی نوجوان کرکٹرکومل جائے۔

پی سی بی ذرائع کا کہنا ہے کہ محمد حفیظ کوڈومیسٹک سیزن میں میچ فیس اورماہانہ رقم ادا کی جائے گی، پروفیسرکےاس اقدام کوسابق کرکٹرزاورسوشل میڈیا صارفین کی جانب سے خوب سراہا جارہا ہے۔ علاوہ ازیں پی سی بی نے اس ضمن میں 30 ستمبرسے شروع ہونے والےنئےسیزن میں شریک کھلاڑیوں کواعلیٰ کارکردگی کا مظاہرہ کرنےکی ترغیب دینےکیلئےزیادہ سے زیادہ انعامات دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

سب سے کم معاوضہ حاصل کرنے والے ڈومیسٹک کرکٹرزاب رواں سال 32 لاکھ روپےسے زائد کی رقم کماسکیں گے جوکہ سیزن 20-2019ءکی نسبت 83 فیصد زیادہ ہے۔ ڈائریکٹر ہائی پرفارمنس ندیم خان نے کہا کہ کہ پی سی بی اپنے فنڈز اور آمدن کرکٹ کے ذریعے ہی بناتا ہے اور مناسب بھی یہی ہے کہ اس آمدن کا ایک بڑا حصہ کرکٹرز اور کھیل کی ترقی پر استعمال کیا جائے

Back to top button