کھیل

کورونا وائرس نے پاکستان ہاکی فیڈریشن کو مزید مشکلات میں ڈال دیا

ایک ماہ کا دورہ کسی کے لیے ممکن نہیں کیونکہ 14 روز کے قرنطینہ کے بعد دوہفتے سیریز کھیلنے کے لیے درکار ہوں گے

پاکستان ہاکی فیڈریشن نے جونیئر ایشیا کپ کی تیاریوں کے سلسلے میں یورپی ممالک کے دورے کا پروگرام بنایا تھا لیکن کووڈ 19 پروٹوکولز نے جونیئر ہاکی ٹیم کے دوروں کو ناممکن بنا دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان ہاکی فیڈریشن کے سیکرٹری آصف باجوہ نے بتایا کہ جونیئر ایشیا کپ کے انعقاد میں چونکہ بہت کم وقت باقی رہ گیا ہے اس لیے پلان یہی بنایا گیا کہ ایبٹ آباد میں فزیکل ٹریننگ 20 ستمبرسے شروع کیا جائے اور پھر اس کے بعد یورپی ممالک کے دوروں کا اہتمام کیا جائے تاکہ جونیئر ٹیم بھرپور تیاری اور ایکسپوژر کے ساتھ جنوری میں جونیئر ایشیا کپ میں حصہ لے لیکن اب یورپ کے کسی دورے کا امکان نہیں ہے کیونکہ 14 روزہ قرنطینہ اور دیگر پروٹوکولز کی وجہ سے غیر ملکی دورے ممکن نہیں۔

آصف باجوہ نے کہا کہ کئی یورپی ممالک سے بات چیت بھی ہوئی ایک ماہ کا دورہ کسی کے لیے ممکن نہیں کیونکہ 14 روز کے قرنطینہ کے بعد دوہفتے سیریز کھیلنے کے لیے درکار ہوں گے، ایک ماہ کے اخراجات برداشت کرنا ممکن نہیں ہوگا۔ آصف باجوہ نے کہا کہ اب سینیئر اور جونیئر ہاکی ٹیموں کے درمیان سیریز پلان کر رہے ہیں۔ سیریز پاکستان کے مختلف شہروں میں کھیلی جائے گی۔ چیف سلیکٹر سینیئر اور جونیئر ٹیم منیجمنٹس اس سلسلے میں ہوم ورک کر رہی ہیں اور جلد اس حوالے سے اعلان کر دیا جائے گا۔

Back to top button