کھیل

کرکٹ بورڈ نے کھلاڑیوں کے آگے گھٹنے ٹیک دئیے

پی سی بی نے کھلاڑیوں اورسپورٹ اسٹاف اجازت دیدی ہےکہ وہ اپنی فیملیزکوساتھ رکھ سکتے ہیں

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے ڈومیسٹک کرکٹ سیزن کے ٹورنامنٹ نیشنل ٹی ٹوئنٹی کپ کےدوران راولپنڈی کے دوسرے اورآخری مرحلے کے لیے کوویڈ 19 پروٹوکولز کے حوالے سے اپ ڈیٹ جاری کی ہےجس کے مطابق کھلاڑی اورسپورٹ اسٹاف فیملیزکو ساتھ رکھ سکیں گے، پی سی بی نے درخواست اس شرط پرمنظورکی ہے کہ ایس او پیزپرسختی سےعمل در آمد ہوگا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے اعلامیے کے مطابق نیشنل ٹی ٹونٹی کپ کے دوسرے مرحلے کے لیے راولپنڈی کے ہوٹل میں موجود کھلاڑیوں اور سپورٹ اسٹاف کو اپنی فیملیز سے ملنے کی اجازت دے دی ہے تاہم فیملیز کی اس ری یونین کے لیے پی سی بی کے کوویڈ 19 پروٹوکولز کے تحت دو ٹیسٹ کروانے لازمی ہیں۔ راولپنڈی پہنچنے پر ان فیملیز سمیت کھلاڑیوں اور اسپورٹ اسٹاف میں شامل تمام عملے کے جمعرات کے روز کوویڈ 19 ٹیسٹ کیے گئے ہیں۔ ایونٹ کے دوسرے مرحلے کا آغاز 9 اکتوبر سے پنڈی کرکٹ اسٹیڈیم راولپنڈی میں ہوگا۔

ڈائریکٹر ہائی پرفارمنس ندیم خان کا کہنا ہے کہ کھلاڑیوں کے لیے ایک طویل عرصہ بائیو سیکیور ببل میں رہنا آسان نہیں ہے اور ممکنہ طور پر اس کے اثرات ان کی کارکردگی پر بھی پڑسکتے ہیں، اس معاملے میں کھلاڑیوں نے ایک جائز درخواست کی، جسے پی سی بی نےاس شرط پر منظور کیا ہے کہ یہ تمام فیملیز اس دوران پی سی بی کے مقررہ کوویڈ19 پروٹوکولز پر سختی سے عملدرآمد کریں گی۔

ندیم خان نے مزید کہا کہ پی سی بی کا میڈیکل اور اسپورٹس سائنسز ڈپارٹمنٹ اس دوران ملک بھر میں کورونا وائرس کی صورتحال کا مسلسل جائزہ لیتا رہے گا اور اگر وہ یہ سمجھے کہ ٹورنامنٹ کے شرکاء کی حفاظت کو یقینی بناتے ہوئے پروٹوکولز میں مزید نرمی کی جاسکتی ہے تو وہ اس حوالے سے اپنا فیصلہ کرسکتا ہے۔

Back to top button