کھیل

بورڈسےاختلافات؟مصباح الحق کاچیف سلیکٹر کےعہدہ سےاستعفیٰ

قومی کرکٹ ٹیم کےچیف سلیکٹراورہیڈ کوچ مصباح الحق نےچیف سلیکٹر کےعہدے سےاستعفیٰ دے دیا ہے

قومی کرکٹ ٹیم کے چیف سلیکٹر اور ہیڈ کوچ مصباح الحق نے چیف سلیکٹر کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے جس کا باضابطہ اعلان انہوں نے پریس کانفرنس میں کیا۔ پریس کانفرنس میں مصباح الحق کا کہنا تھا کہ زیادہ تر بیرون ملک ہونے کی وجہ سے دوہری ذمہ داری مشکل ہوتی ہے اس لئے چیف سلیکٹر کا عہدہ چھوڑ دیا ہے، زمبابوے کے خلاف ہوم سیریز اور دورہ نیوزی لینڈ کی ٹیمیں منتخب کروں گا اور چیف سلیکٹر کی ذمہ داری 30 نومبر تک نبھاتا رہوں گا، نیا چیف سلیکٹر جنوبی افریقہ کے خلاف سیریز سے ذمہ داریاں لے گا، چیف سلیکٹر کا انتخاب بورڈ کا استحقاق ہے۔

مصباح الحق کا کہنا تھا کہ بورڈ سےاختلافات ہیں اور نہ ہی کسی کھلاڑی سے کوئی اختلاف ہے، چیئرمین سے میٹنگ یا وزیر اعظم سے ملاقات استعفیٰ کی وجہ نہیں،  کام صحیح یا غلط کی وجہ سے نہیں، آنے والی مصروفیات کی وجہ سے عہدہ چھوڑا، افواہوں میں سچائی نہیں ورنہ کسی بھی عہدے پر نہ ہوتا، بورڈ کی مشاورت سے تنخواہ ملتی تھی ، اب جو کام کروں گا اسی کا معاوضہ ملے گا۔

ہیڈ کوچ کا کہنا تھا کہ میں کوچنگ پربھرپورتوجہ دینا چاہتا ہوں اوربورڈ کوبھی بتا چکا ہوں،آجکل کی کوچنگ کےلئےفٹنس کی ضرورت ہے اور مجھ میں ابھی انرجی ہے، ہیڈ کوچ کے طورپرہاراورجیت کا ذمہ دارہوں گا، میری نظریں اگلےدو برس کی کمٹمنٹ پرہیں، ہمارا سب سے بڑا ہدف تینوں فارمیٹس میں پاکستان کونمبرون ٹیم بنانا ہے۔ واضح رہےکہ قومی ٹیم کےسابق کپتان مصباح الحق کو ہیڈ کوچ اورچیف سلیکٹر کی ذمہ داریاں 4 ستمبر 2019 کو دی گئی تھیں تاہم انہیں ٹیم کی پرفارمنس پرشدید تنقید کا سامنا رہا، پاکستان میں پہلی باردونوں بڑے عہدے ایک ساتھ دے کرتجربہ کیا گیا تھا۔

Back to top button