کھیل

لاہور قلندرز فائنل میں کیسے پنچی؟پتا چلا لیا گیا

لاہور قلندر ز کی ٹیم کے کپتان سہیل اختر نے دونوں ٹیموں کو متوازن قرار دے دیا

پاکستان سپرلیگ (پی ایس ایل) میں پہلی بارفائنل کھیلنےکا اعزازحاصل کرنےوالی لاہورقلندرزکی ٹیم کےکپتان سہیل اخترنےدونوں ٹیموں کو متوازن قراردے دیا۔ کراچی میں فائنل سےقبل ورچوئل پریس کانفرنس کےدوران سہیل اخترنےٹیم کی عمدہ پرفارمنس کےحوالےسےایک راز بھی پردہ اٹھادیا۔ انہوں نےکہا کہ ٹیم میں شامل محمد حفیظ بہت ہی سینئرکھلاڑی ہیں،دوران میچ اُن سےمشورے کرتا رہتا ہوں لیکن آخری فیصلہ میرا ہی ہوتا ہے۔ لاہورقلندرزکےکپتان نےمزید کہا کہ فلڈ لائٹس میں کھیلنےیا نہ کھیلنےسےزیادہ فرق نہیں پڑتا، فائنل کی حتمی الیون کا فیصلہ وکٹ دیکھ کرکریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ ٹی 20 کرکٹ میں ایک یا دوپلیئرزکا پرفارم کرنا بھی کافی ہوتا ہے،اچھی بات یہ ہےکہ ہمارا ہرکھلاڑی کسی نہ کسی میچ میں کارکردگی دکھا رہا ہے،جس کی وجہ سےفائنل تک پہنچے۔ سہیل اخترنےیہ بھی کہا کہ لاہورقلندرزنےگزشتہ 5 سال کےدوران ٹیلنٹ ہنٹ کیلئےبہت کام کیا، یہ اسی چیزکا نتیجہ ہےکہ لاہورقلندرزآج پی ایس ایل کےفائنل میں ہے، ہماری ٹیم کوپورے پاکستان سےسپورٹ مل رہی ہے۔ انہوں نےکہا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نےفائنل ایونٹ کےلیےدوٹرافیزرکھی ہیں، ایک ونراوردوسری رنراپ کےلیے،جوبھی ٹرافی اٹھائیں خوشی اس بات کی ہےکہ ٹورنامنٹ خیریت سےہوگیا۔

Back to top button