کھیل

ورلڈکپ بھارت میں ہوا توپی سی بی کیا کرے گا؟

احسان مانی نےکہاکہ بھارت نےپاکستانی اسکواڈ کیلیےویزوں کی یقین دہانی نہیں کرائی

لاہورمیں میڈیا سےگفتگوکرتےہوئےاحسان مانی نےکہاکہ بھارت نےپاکستانی اسکواڈ کیلیےویزوں کی یقین دہانی نہیں کرائی توٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ یواے ای منتقل کرنےکا مطالبہ کریں گے،صرف کرکٹرزاورمعاون اسٹاف ہی نہیں بلکہ صحافیوں اورشائقین کوبھی ویزے ملنےچاہیئں،اگرایسا نہ کیا گیا تومیگا ایونٹ کی منتقلی کا مطالبہ ہمارا آئینی حق بنتا ہے۔

انھوں نےکہا کہ بی سی سی آئی کوروناکےباوجود ورلڈکپ کی میزبانی کا ارادہ رکھتا ہے،امید ہےکہ وہ انتظامات کرنے میں کامیاب ہوجائےگا، پاکستانی حکومت نےکبھی نہیں کہا کہ بھارت میں جاکرنہ کھیلولیکن وہاں سےسیاست کوکھیلوں کولایا جاتا ہے، پی سی بی کسی بدمزگی سےبچنےکیلیےویزوں اورسیکیورٹی کی یقین دہانی چاہتا ہے،آئی سی سی نے بھارتی بورڈ کوخط لکھا ہوا ہے،انھوں نےمارچ کےآخرتک جواب دینےکا کہہ دیا۔ احسان مانی نےکہا کہ انٹرنیشنل کرکٹ ایونٹس کی میزبانی کےلیےہم نےآئی سی سی سےرابطہ کیا ہے، 1یا2 ٹورنامنٹس یواے ای کےساتھ مل کربھی پلان کرسکتےہیں۔

انہوں نےکہا کہ کراچی اوراسلام آباد کےدرمیان ہوائی سفرکیلیےجتنا وقت درکارہوتا ہےاتنی دیر میں دبئی سےپاکستان پہنچ سکتےہیں، اس لیےایونٹ کی مشترکہ میزبانی میں سفری مسائل نہیں ہونگے،یواے ای کی جانب سےرضامندی کا خط بھی آئی سی سی کو اظہاردلچسپی کےساتھ بجھوایا ہے۔ ایک سوال پرچیئرمین پی سی بی نےکہا کہ بھارتی ٹیم آئی سی سی ٹیسٹ چیمپئن شپ کےفائنل میں پہنچ گئی تورواں سال ایشیا کپ کا انعقاد ممکن نہیں ہوگا،اس کا2022 یا 2023 میں پلان بنےگا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button