کھیل

پاکستان کرکٹ ٹیم میں کون کون سی کمزوریاں ہیں؟ہیڈ کوچ کھل کر بول پڑے

گیری کرسٹن نے آئرلینڈ کے خلاف میچ کے بعد کھلاڑیوں سے کھلے انداز میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا فٹنس لیول معیاری نہیں اسے بڑھانا پڑے گا

لاہور(سپورٹس ڈیسک)پاکستان کرکٹ ٹیم میں کون کون سی کمزوریاں ہیں؟ہیڈ کوچ کھل کر بول پڑے۔ ہیڈ کوچ گیری کرسٹن نے پاکستان کرکٹ ٹیم کو آئینہ دکھا دیا۔ گیری کرسٹن نے آئرلینڈ کے خلاف میچ کے بعد کھلاڑیوں سے کھلے انداز میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا فٹنس لیول معیاری نہیں اسے بڑھانا پڑے گا، ٹیم کے کھلاڑیوں کا فٹنس لیول اپ ٹو دی مارک ہے ہی نہیں، ہم اسکلز لیول میں دنیا سے بہت پیچھے ہیں۔ ذرائع کے مطابق گیری کرسٹن کھلاڑیوں کے فٹنس لیول، اسکلز اور کھیل سے آگاہی نہ ہونے سے مایوس تھے اور انہوں نے ٹیم کے اتحاد پر بھی سوال اٹھایا۔

ذرائع کا بتانا ہے کہ ہیڈ کوچ قومی ٹیم کے کھلاڑیوں کے متحد نہ ہونے اور ایک دوسرے کو سپورٹ نہ کرنے پر مایوس ہیں، انہوں نے کھلاڑیوں کے آپس کے اختلافات کے حوالے سے بھی کھل کر گفتگو کی۔ ذرائع کے مطابق گیری کرسٹن سینئر کھلاڑیوں کے اختلافات اور ٹیم کے معاملات میں عدم دلچسپی سے بھی ناخوش ہیں۔ گیری کرسٹن نے کھلاڑیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اتنی کرکٹ کھیلنے کے باوجود کھیل سے آگاہی نہیں کہ کون سا شاٹ کب کھیلنا ہے کسی کو نہیں علم، جب سے آیا ہوں یہی نوٹ کیا ہے کہ اس ٹیم میں اتحاد نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ کہنے کے لیے یہ ٹیم ہے لیکن یہ ٹیم نہیں ہے، کوئی کھلاڑی کسی کو سپورٹ نہیں کرتا، دائیں بائیں سب الگ الگ ہیں، کئی ٹیموں کے ساتھ کام کرچکا ہوں ایسی صورتحال نہیں دیکھی۔ گیری کرسٹن کا مزید کہنا تھا کہ اگر ہم نے دنیا کا مقابلہ کرنا ہے تو فٹنس اور اسکلز کو بہتر بنانا ہے اور متحد ہونا ہے، جو کھلاڑی ان چیزوں کو بہتر کرے گا وہی ٹیم میں ہوگا ورنہ کوئی ٹیم میں نہیں ہوگا۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button