ٹیکنا لوجی

ٹیسلا گاڑیاں کس کرنسی میں خریدی جاسکتی ہیں؟

الیکٹرک کارسازکمپنی نےگزشتہ ماہ کہا تھا کہ انہوں نےڈیڑھ ارب ڈالرمالیت کےبٹ کوائن خریدے ہیں

الیکٹرک گاڑیاں بنانے والی کمپنی ٹیسلا کے چیف ایف ایگزیکٹو افسر (سی ای او) ایلون مسک نے کہا ہے کہ صارفین اب بٹ کوائن سے بھی ان کی گاڑیاں خرید سکیں گے۔ ایلون مسک کا یہ اعلان کامرس میں کرپٹو کرنسی کے استعمال سے متعلق ایک اہم اقدام ہے۔ برطانوی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ایلون مسک نے ٹوئٹ میں کہا کہ ‘اب آپ بٹ کوائن سے ٹیسلا خرید سکتے ہیں’۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ آپشن رواں سال کے آخر میں امریکا کے باہر بھی موجود ہوگا۔

الیکٹرک کار ساز کمپنی نے گزشتہ ماہ کہا تھا کہ انہوں نے ڈیڑھ ارب ڈالر مالیت کے بٹ کوائن خریدے ہیں اور وہ جلد گاڑیوں کی ادائیگی کے لیے بٹ کوائن وصول کرنا شروع کریں گے۔ جس کے بعد بٹ کوائن کی قدر میں بڑا اضافہ دیکھا گیا تھا جو بڑھ کر 62 ہزار ڈالر ہوگئی تھی۔ دنیا کی سب سے بڑی ڈیجیٹل کرنسی بٹ کوائن کی قدر ایلون مسک کی ٹوئٹ کے بعد 4 فیصد سے زائد بڑھ گئی تھی اور 56 ہزار 429 ڈالر پر ٹریڈ کررہی تھی۔

ایلون مسک نے کہا کہ ٹیسلا کو ادا کیے جانے والے بٹ کوائن کو روایتی کرنسی میں تبدیل نہیں کیا جائے گا بلکہ انہوں نے دیگر تفصیلات بتائیں کہ بٹ کوائن کی ادائیگی کس طریقہ کار کے تحت ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ کمپنی اس ضمن میں ‘انٹرنل اینڈ اوپن سورس سافٹ ویئر’ کا استعمال کررہی ہے۔ خیال رہے کہ اکثر بڑی کمپنیاں جیسا کہ اے ٹی اینڈ ٹی اور مائیکروساٖفٹ جو صارفین کو بٹ کوائن سے ادائیگی کی اجازت دیتے ہیں، وہ خصوصی پیمنٹ پروسیسرز استعمال کرتے ہیں جو کرپٹو کرنسی کو ڈالرز میں منتقل کرکے ان کی مجموعی رقم کمپنی کو بھیجتے ہیں۔

دیگر کرپٹوکرنسیز کی طرح بڑی اکنامیز میں بٹ کوائن کا استعمال کم ہے۔ ایلون مسک جو ٹوئٹر پر باقاعدگی سے کرپٹو کرنسیز سے متعلق ٹوئٹ کرتے ہیں، انہوں نے گزشتہ ماہ روایتی نقد رقم پر تنقید کی تھی۔ بٹ کوائن میں ٹیسلا کی سرمایہ کاری کے بعد ماسٹر کارڈ اور بینک آف نیویارک میلن نے بھی اس حوالے سے کام شروع کیا ہے۔ اس حوالے سے پیش گوئی کی جارہی ہے کہ بٹ کوائن اور دیگر کرپٹوکرنسیز جلد سرمایہ کاری کا باقاعدہ حصہ بن جائیں گی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button