ٹیکنا لوجی

فیس بک پوسٹ میں غیرپسندیدہ تبصرے روکنا ممکن

فیس بک نے آپ کی پوسٹ پرکسی مطلوبہ شخص کا تبصرہ یا کمنٹس روکنےکا آپشن پیش کردیا

فیس بک نے آپ کی پوسٹ پرکسی مطلوبہ شخص کا تبصرہ یا کمنٹس روکنےکا آپشن پیش کردیا، یعنی پوسٹ کےساتھ ہی اسےجزوی طورپر طنزیہ جواب یا ہراساں کرنےسے بازرکھا جاسکتا ہے۔ فیس بک پرکھلاڑیوں اوردیگرشخصیات نےاس جانب اپنی توجہ مبذول کرائی تھی کیونکہ ان کی پوسٹ پررنگ، نسل اوردیگرتعصبات کی بنیاد پرہرشخص نے اپنا منہ اورکمنٹس کا دہانہ کھول رکھا تھا۔ فیس بک نے اب اپنے پلیٹ فارم پرنفرت اورنسل کی بنا پرنازیبا جملوں کو روکنے کا ایک اہم ٹول پیش کردیا ہے۔

کمپنی کے مطابق اس ٹول سے لوگ ایک جانب تو پوسٹ کو تمام افراد، مخصوص افراد یا گروپ کے لیے منتخب کرسکتےہیں۔ اس طرح یہ پوسٹ وہی دیکھ سکیں گے اور عوامی پوسٹ پر بھی مخصوص افراد کوکمنٹس سے روکا جاسکےگا۔ یہ سہولت پہلےہی فیس بک کےایک اور پلیٹ فارم انسٹاگرام پربھی پیش کی جاچکی ہے۔ ’لوگوں کوعوامی پوسٹ پرمزید کنٹرول فراہم کرکے،ہم پرامید ہیں کہ وہ اپنے مندرجات میں مدد لیتے ہوئےغیرضروری مداخلت کوروک سکیں گے،‘ فیس بک نےاپنے اعلامئے میں کہا۔

فیس بک نے مزید کہا کہ اگرآپ عوامی شخصیت، کوئی تخلیق کاریا کسی برانڈ سے وابستہ ہیں توآپ بھی کمنٹ کرنے والے افراد کو محدود رکھ سکتےہیں۔ اس سے آپ کا تحفظ بڑھے گا اورآپ کمیونٹی میں بامعنی گفتگوشروع کرسکیں گے۔ واضح رہے کہ برطانوی فٹبال کھلاڑیوں کوفیس بک پرایسے ہی مسائل کا سامنا تھا اور وہ اس پلیٹ فارم سے دورہوتے جارہے تھے۔ تاہم کئی کھلاڑیوں نے کہا تھا ان کی پوسٹ پر نسلی منافرت کے کمنٹس روکنے میں فیس بک ناکام رہا ہے۔ اس کے بعد ہی فیس بک نے یہ قدم اٹھایا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button